غیر قانونی شادی ہالز اور مارکیز کے خلاف گرینڈ آپریشن کا فیصلہ

پہلے مرحلے میں غیر قانونی مارکیز و شادی ہالز کو سر بمہر ،دوسرے مرحلے میں مسمار کیا جائے گا

اتوار ستمبر 17:30

راولپنڈی 23ستمبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 23 ستمبر2018ء) راولپنڈی کنٹونمنٹ بورڈ نے غیر قانونی شادی ہالز اور مارکیز کے خلاف گرینڈ آپریشن کا فیصلہ کر لیا ،پہلے مرحلے میں غیر قانونی مارکیز و شادی ہالز کو سر بمہر دوسرے مرحلے میں مسمار کیا جائے گا ۔ترجمان آر سی بی قیصر محمود نے اے پی پی کو بتایاکہ کینٹ کی حدود میں واقع تمام شادی ہالز اور مارکیز کی ریگولرائزیشن کے لیے سروے کا آغاز کر دیا گیاہے جس کے بعد شادی ہالز و مارکیز مالکان کو ریگولرائزیشن کی ڈیڈ لائن دی جائے گی اور مقررہ تاریخ تک ریگولرائزیشن نہ کرانے والے شادی ہالز اور مارکیز کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے انہیں سر بمہر کر دیا جائے ۔

ایک سوال کے جواب میں ترجمان نے قومی خبرا یجنسی کو بتایاکہ بلڈنگ بائی لاز کی خلاف ورزی کے مرتکب و دیگر قانونی تقاضے پورے نہ کرنے والے شادی ہالز اور مارکیز کو کام کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی تاھم کینٹ بورڈ کی مطلوبہ شرائط اور قواعد و ضوابط پر پورا اترنے والے شادی ہالز کو ریگولرائزیشن کی حتمی تاریخ تک مہلت دی جائے اور اس کے بعد گرینڈ آپریشن شروع کیا جائے گا ۔

(جاری ہے)

قیصر محمود نے ایک اور سوال کے جواب میں سرکاری خبر رساں ادارے کو بتایاکہ کنٹونمنٹ ایگزیکٹو آفیسر سبطین رضا کی خصوصی ہدایات پر غیر قانونی شادی ہالز اور مارکیز کے خلاف بلاامتیاز کارروائی کی جائے گی اور اس حوالے سے کسی قسم کی رعائت نہیں برتی جائے گی ۔کنٹونمنٹ ایگزیکٹو آفیسر سبطین رضا نے اے پی پی سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ کینٹ بورڈ انتظامیہ شہریوں کو سہولیات کی فراہمی کے لیے پرعزم ہے اور ٹریفک روانی میں رکاوٹ بننے والے شادی ہالز سمیت تمام غیر قانونی مارکیز کے خلاف کارروائی کی جائے گی ۔ذرائع نے اے پی پی کو بتایاکہ کینٹ انتظامیہ پہلے مرحلے میں غیر قانونی شادی ہالز اور مارکیز کو سربمہر کرنے جبکہ دوسرے مرحلے میں مسمارگی کے لیے منصوبہ بندی مکمل کر چکی ہے ۔

متعلقہ عنوان :