گیس مہنگی ہونے سے گھی ،کوکنگ آئل کی قیمت میں پانچ روپے فی کلو اضافہ ہو جائے گا،چیئرمین پاکستان وناسپتی مینوفیکچررز ایسوسی ایشن

گھی اور کوکنگ آئل کے استعمال میں کمی سے فوڈ سیکورٹی کے مسائل بڑھیں گے،غریب عوام کو مہنگائی سے بچانے کیلئے اس شعبہ کو استثنیٰ دیا جائے، عبدالوحید

پیر ستمبر 15:00

کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 24 ستمبر2018ء) پاکستان وناسپتی مینوفیکچررز ایسوسی ایشن (پی وی ایم ای) کے چیئرمین شیخ عبدالوحید نے کہا ہے کہ قدرتی گیس کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ کے بعد گھی اور کوکنگ آئل کی قیمت میں پانچ روپے فی کلو اضافہ ہو جائے گا۔گھی اور خوردنی تیل کے شعبہ کیلئے گیس کی قیمت میں تیس فیصد اضافہ کیا گیا ہے جس سے سولہ کلو کے ٹین میں قیمت میں اسی روپے کا اضافہ ہو گا جس سے غریب عوام متاثر ہو گی اس لئے قومی معیشت کے اس اہم شعبہ کیلئے سوئی گیس کی قیمت میںکیا جانے والا حالیہ اضافہ واپس لیا جائے۔

پی وی ایم اے کے چیئرمین شیخ عبدالوحید نے یہاں جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا کہ پاکستان میں گھی اور خوردنی تیل کی فی کس کھپت پہلے ہی بین الاقوامی اوسط کے مقابلہ میں بہت کم ہے جس میں مہنگائی کے سبب مزید کمی آئے گی جس سے فوڈ سیکورٹی اور صحت عامہ کے مسائل بڑھیں گے۔

(جاری ہے)

انھوں نے کہا کہ پیداوار مہنگی ہونے سے ملک میں کھپت کم ہو جائے گی،برامدات متاثر ہوں گی جبکہ درامدات اورسمگلنگ میں اضافہ ہو جائے گا ۔

اشیائے خورد و نوش کی قیمت کو متوازن رکھنے کیلئے دیگر ممالک کی طرح اقدمات کئے جائیںاور حکومت اپنی آمدنی بڑھانے کیلئے اشیائے ضروریہ کے بجائے اشیائے تعیش پر ٹیکس بڑھا ئے۔انھوں نے کہا کہ ملک میں گیس کے ذخائر دریافت کرنے کے بجائے درامد شدہ مہنگی ایل این جی پر انحصار بڑھانے سے کاروباری لاگت بڑھی جبکہ معیشت اور عوام متاثر ہوئی۔