وزیراعظم عمران خان کا نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کے قیام کا اعلان

میں خود نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کو مانیٹر کروں گا،نوجوان کنسٹرکشن کمپنی خود شروع کریں اور انڈسٹری میں شامل ہوں۔ وزیراعظم عمران خان کا نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے کی تقریب سے خطاب

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان بدھ اکتوبر 16:30

وزیراعظم عمران خان کا نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کے قیام کا اعلان
اسلام آباد (اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔10اکتوبر 2018ء) وزیراعظم عمران خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کے قیام کا اعلان کر دیا ۔تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کا نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ہاؤسنگ پالیسی قوم کے سامنے لے کر آرہا ہوں۔ہاؤسنگ ایک ایسی انڈسٹری ہے جس سے سارا ملک چلتا ہے۔۔عمران خان کا کہنا تھا کہ ہاؤسنگ سکیم سے ملک میں خوشحالی آئے گی۔

میں خود نیا پاکستان ہاؤسنگ اتھارٹی کو مانیٹر کروں گا۔عمران خان کا کہنا تھا کہ 7 اضلاع کے اندر یہ پراجیکٹ شروع کیا جا ئے گا۔حکومت ہاؤسنگ اسکیم کے لیے صرف زمین دے گی۔کچی آبادیوں کا بھی ریکارڈ اکھٹا کریں گے۔کچی آبادیوں پر کثیر المنزلہ عمارتیں بنائیں گے۔نیا پاکستان ہاؤسنگ منصوبے پر 90 دن کے اندر کام شروع کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

عمران خان کا کہنا تھا کہ 40 صنعتیں ہاؤس انڈسٹری سے جڑی ہوئی ہیں۔

ہاؤسنگ پاکستان میں وہ لوگ افورڈ کرسکتے ہیں جن کے پاس پیسہ ہے۔ہم نے 50 لاکھ گھر پانچ سال میں بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ہمارا مقصد عام لوگوں کو گھر بنا کر دینا ہے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ نوجوان کنسٹرکشن کمپنی خود شروع کریں اور انڈسٹری میں شامل ہوں۔ہماری کوشش ہے کہ بیروزگارنوجوان ہاؤسنگ سکیم سے روزگار حاصل کریں۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ اسکلڈ ڈویلپمنٹ پروگرام شروع کر رہے ہیں۔

خیال رہے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے بے گھر افراد کے لیے 50 لاکھ گھر تعمیر کرنے کا اعلان کیا تھا جس پر ابتدائی کام مکمل کر لیا گیا ہے ، رہائشی منصوبے پر ابتدائی کام مکمل ہونے سے بے گھر افراد میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔ پالیسی کے تحت بڑی شاہراہوں کے ارد گرد نئے شہر آباد ہوں گے۔ حکومت کو ملائشین ماڈل کے گھر تعمیر کرنے کی تجویزپیش کی گئی ہے۔اس پالیسی سے اربوں ڈالرز کی سرمایہ کاری پاکستان آئے گی۔ گھروں کی تقسیم غربت کی لکیر سے نیچے افراد میں ہو گی۔ غریب شہریوں کو بھی 15 سے 20 سال کی اقساط پر گھر ملیں گے۔پالیسی کے تحت ملک بھر میں 3،5 اور 7 مرلے کے گھر تعمیر کیے جائیں گے۔ذرائع کے مطابق چھوٹا گھر دو کمروں پر مشتمل ہو گا، جس کی قیمت 15 لاکھ روپے تک رکھنے کا امکان ہے۔