ہمیں موسمیاتی تبدیلیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے توانائی کے حصول کیلئے متبادل ذرائع اپنانا ہوں گے ،ْامین اسلم خان

جمعرات اکتوبر 23:43

اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 11 اکتوبر2018ء) وزیراعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم خان نے کہا ہے کہ ہمیں موسمیاتی تبدیلیوں کو مدنظر رکھتے ہوئے توانائی کے حصول کیلئے متبادل ذرائع اپنانا ہوں گے۔ وہ انرجی کمپنی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر سے ملاقات کے دوران بات چیت کررہے تھے۔ وفاقی سیکرٹری موسمیاتی تبدیلی شاہ رٴْخ نصرت اور ایڈیشنل سیکرٹری خرم علی آغا بھی اس موقع پر موجود تھے۔

سی ای او ریان انرجی کمپنی مجتبٰی حیدر نے وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی کو اپنی کمپنی کے خدوخال سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کمپنی پاکستان میں شمسی توانائی پر کام کرنے والی سب سے بڑی کمپنیوں میں سے ایک ہے، ہم بہت سی صنعتوں اور کاروباری مراکز کو شمسی توانائی کی سہولت فراہم کر رہے ہیں، اس کے علاوہ ہم ٹیلی کام، صحت، تعلیم، زراعت اور ماحولیات سے منسلک کے منصوبوں میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں کیونکہ وزارت موسمیاتی تبدیلی سے ہمارا ایجنڈا مطابقت رکھتا ہے اس لئے ہماری خواہش ہے کہ ہم پاکستان میں ماحول کو سازگار بنانے کیلئے، متبادل توانائی کے شعبہ میں وزارت کے ساتھ، پبلک پرائیویٹ پارٹنر شپ کے تحت مل کر کام کریں۔

(جاری ہے)

ملک امین اسلم خان نے کہا کہ گزشتہ چند سالوں میں جہاں گلوبل وارمنگ نے موسمیاتی تبدیلیاں کی ہیں وہاں سیلاب، درجہ حرارت میں اضافہ، اور خشک سالی جیسے بہت سے مسائل کو جنم دیا ہے جس سے نہ صرف انسانی زندگیاں متاثر ہوئی ہیں بلکہ معیشت کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے اب وقت آن پہنچا ہے کہ ہم اپنے آپ کو ان مسائل سے بچانے کیلئے توانائی کے حصول کیلئے متبادل ذرائع اختیار کریں جن میں شمسی توانائی بھی ایک اہم ذریعہ ہے اور وزارت موسمیاتی تبدیلی اس پر ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہی ہے۔

وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم خان بے کہا کہ ہمیں عوام میں متبادل توانائی کے حوالہ سے شعور پیدا کرنا ہو گا تاکہ ہم اپنی آنے والی نسلوں کو آلودگی سے پاک، صاف اور سرسبز و شاداب پاکستان دے سکیں۔