آذربائیجان پاکستان کو ادھار تیل دینے پر راضی ہوگیا

آذربائیجان کی پاکستان کو 100 ملین ڈالر مالیت تک کا تیل ادھار دینے کی پیشکش

muhammad ali محمد علی پیر اکتوبر 22:37

آذربائیجان پاکستان کو ادھار تیل دینے پر راضی ہوگیا
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 اکتوبر2018ء) آذربائیجان پاکستان کو ادھار تیل دینے پر راضی ہوگیا، آذربائیجان کی پاکستان کو 100 ملین ڈالر مالیت تک کا تیل ادھار دینے کی پیشکش۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان نے تیزی سے گرتے ہوئے زرمبادلہ ذخائر کے باعث کچھ روز قبل سعودی عرب سے درخواست کی تھی کہ اسے کچھ عرصے کیلئے ادھار تیل دینے کی سہولت فراہم کی جائے۔

پاکستان نے سعودی عرب سے درخواست کی تھی کہ 5 سال تک تین ماہ کیلئے ادھار تیل دینے کی سہولت دے۔ تاہم سعودی عرب نے پاکستان کی درخواست مسترد کر دی تھی۔ تاہم اب سعودی عرب کے بعد ایک دوسرے اسلامی ملک نے پاکستان کو ادھار تیل دینے کی پیش کش کردی ہے۔ ذرائع کے مطابق آذربائیجان نے پاکستان کو 100 ملین ڈالر مالیت تک کی پیٹرولیم مصنوعات ادھار کی صورت دینے کی پیشکش کی ہے۔

(جاری ہے)

اگرمعاہدہ طے پاجائے تو آذربائیجان پاکستان کو 13 ارب سے زائد مالیت کی پیٹرولیم مصنوعات ادھار پر دے گا۔ جبکہ واضح رہے کہ پاکستان اپنی پیٹرولیم مصنوعات کی ضروریات کیلئے ہپمیشہ سے سعودی عرب، متحدہ عرب امارات اور کویت پر انحصار کرتا آیا ہے۔ لیکن پہلی مرتبہ پاکستان نے خلیجی ممالک کے علاوہ کسی دوسرے ملک سے تیل خریدنے پر سنجیدگی سے غور شروع کردیا ہے۔ ذرائع کے مطابق ادھار تیل کے حصول کیلئے پاکستان اور آذربائیجان کے درمیان حکومتی سطح پر جلد معاہدہ طے پا جانے کا امکان ہے۔ آذربائیجان سے تیل کے حصول کے باعث پاکستان میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی بھی واقع ہوگی۔