خیبرپختونخوا جغرافیائی اعتبار سے وسطی ایشیائی ریاستوں کے مابین تجارتی گیٹ وے ہے، گورنر شاہ فرمان

پیر اکتوبر 20:01

خیبرپختونخوا جغرافیائی اعتبار سے وسطی ایشیائی ریاستوں کے مابین تجارتی ..
پشاور۔22 اکتوبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 22 اکتوبر2018ء) گورنرخیبرپختونخوا شاہ فرمان نے کہاہے کہ پاک چین دوستی ہر آزمائش سے کامیابی کے ساتھ گزری ہے اور دونوں ممالک کے مابین یہ تعلقات مزید مضبوط ومستحکم ہوں گے‘ بالخصوص صوبہ خیبرپختونخوا اپنے جغرافیائی ساخت کے حوالے سے چین ، افغانستان اور وسطی ایشیائی ریاستوں کے مابین تجارتی روابط کا گیٹ وے ہے‘ سی پیک منصوبے سے باہمی روابط کو مزید استحکام ملے گا‘ صوبہ خیبرپختونخوا اور قبائلی اضلاع قدرتی وسائل، توانائی اور زراعت وجنگلات کی دولت سے مالامال ہیں ، چینی سرمایہ کار ان شعبوں میں سرمایہ کاری کرکے خود بھی مستفیدہوں اوریہاں انڈسٹری کے فروغ اورروزگار کے مواقع کی فراہمی میں بھی ممدومعاون ہوں۔

ان خیالات کااظہار انہوںنے گورنر ہاؤس پشاورمیں پیرکے کے روز چینی روڈز بریج کمپنی کے وائس پریذیڈنٹ اوربزنس انویسٹمنٹ کے چیئرمین مسٹرڈانگ بوئنگ کی قیادت میں آئے ہوئے 10 رکنی وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

(جاری ہے)

اس موقع پر خیبرپختونخوا حکومت کے بورڈ آف انویسٹمنٹ کے وائس چیئرمین سیف السلیم الرحمان ، رشکئی سپیشل انڈسٹری زون کے چیف ایگزیکٹیو سید احمد اور دیگر متعلقہ حکام بھی موجود تھے۔

وفد نے گورنرکو یقین دلایا کہ ان کا ادارہ خیبرپختونخوا اورقبائلی اضلاع میں منرل بیسڈانڈسٹری، انرجی اینڈپاور، آئل اینڈگیس اورایگرو بیسڈانڈسٹری کے شعبوں میں سرمایہ کاری کا جائزہ لے گی۔ گورنرنے کہاکہ چینی اداروں کی فنی واقتصادی مہارت، سرمایہ کاری اور ہمارے قدرتی وسائل وافرادی قوت مل کرجوائنٹ وینچر کے تحت باہمی اقتصادی ومعاشی روابط اورتعلقات کو مزید مستحکم کرسکتے ہیں جس کے نتیجے میں یہاں نہ صرف صنعتی وتجارتی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا بلکہ روزگار کے مواقع بھی بڑھیں گے۔