دھنیہ کی بہتر پیداوارکیلئے فصل کی آبپاشی میں خصوصی احتیاط برتنے کی ہدایت

بدھ نومبر 13:42

قصور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 نومبر2018ء) ماہرین زراعت نے دھنیہ کی بہتر پیداوارکیلئے فصل کی آبپاشی میں خصوصی احتیاط برتنے کی ہدایت کی ہے اورکہا ہے کہ کاشتکارآبپاشی کے سلسلہ میں خصوصی طور پر اس امرکاخیال رکھیں کہ کھیلیاں پانی میں ہرگزنہ ڈوبنے پائیں کیونکہ اس سے دھنیہ کی پیداوار بری طرح متاثر ہوسکتی ہے۔

(جاری ہے)

انہوں نے بتایا کہ اگرفصل کی بیجائی وترمیں کی گئی ہو تو فصل کے اگنے کے بعد 15سی20روزتک پانی نہ دیاجائے اور جب پودے 4سے 5انچ بڑے ہوجائیں تو ان کی چھدرائی کردی جائے۔

انہوں نے کہا کہ پودے کا فاصلہ 9 سی12انچ تک رکھنے سے پودے اچھی طرح نشوونما پاسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دو سے تین مرتبہ گوڈی کرکے جڑی بوٹیوں کی تلفی سے پودے موثر اندازمیں زمین سے اپنی غذا حاصل کرکے بہتر پرورش پاسکتے ہیں ۔انہوں نے دھنیہ کی کٹائی کے بعد زمین کی زرخیزی کو مدنظررکھتے ہوئے نائٹروجنی کھادڈالنے کی ضرورت پر بھی زوردیا جوفصل کی بڑھوتری تیز کرنے میں معاون ثابت ہوتی ہے۔

متعلقہ عنوان :