لاہور، احسن اقبال کیخلاف عدلیہ مخالف بیان دینے کی درخواست پر فریقین کے وکلا کی طرف سے التوا کی درخواست منظور

پیر نومبر 23:11

لاہور، احسن اقبال کیخلاف عدلیہ مخالف بیان دینے کی درخواست پر فریقین ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 12 نومبر2018ء) لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کیخلاف عدلیہ مخالف بیان دینے پر توہین عدالت کی درخواست پر فریقین کے وکلا کی طرف سے التوا کی درخواست منظور کر لی ۔ عدالت نے درخواست کے قابل سماعت ہونے متعلق فریقین کو 19 نومبر کو طلب کر لیا ۔ درخواست گزار کے وکیل نے گزشتہ سماعت پر سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کی تقریر کی سی ڈی اور دیگر ریکارڈ پیش کردیا تھا ۔

(جاری ہے)

جسٹس مظاہر علی اکبر نقوی کی سربراہی میں تین رکنی فل بنچ نے کیس کی سماعت کی ۔ درخواست گزار کا موقف ہے کہ احسن اقبال نے نواز شریف کی سزا معطلی پر عدلیہ مخالف بیان دیا جو توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے۔ ہائیکورٹ نے احسن اقبال کیخلاف توہین عدالت کے نوٹس ختم کرتے ہوئے انہیں مستقبل میں محتاط رہنے کی ہدایت کی تھی ۔ احسن اقبال نے ھائیکورٹ کی تنبیہ کو نظر انداز کیا جو قابل دست اندازی جرم ہے۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ احسن اقبال کیخلاف توہین عدالت کے قانون کے تحت کارروائی کی جائے۔