اسرائیلی فوج کی غزہ کی پٹی پر بمباری جاری مزید 5فلسطینی شہید ہو گئے

حماس کے اسرائیل پر جوابی متعدد مارٹر اور راکٹ حملوں میں 2اسرائیلی فوجی ہلاک ‘10 زخمی

Mian Nadeem میاں محمد ندیم منگل نومبر 15:58

اسرائیلی فوج کی غزہ کی پٹی پر بمباری جاری مزید 5فلسطینی شہید ہو گئے
غزہ(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔13 نومبر۔2018ء) اسرائیلی فوج کی غزہ کی پٹی پر بمباری کے نتیجے میں 24گھنٹوں کے دوران مزید 5فلسطینی شہید ہو گئے ہیں. حماس کے اسرائیل پر جوابی متعدد مارٹر اور راکٹ حملوں میں 2اسرائیلی فوجی ہلاک جبکہ 10 زخمی ہوئے ہیں. غزہ کی وزارت صحت کے مطابق اسرائیلی فورسز کے نئے فضائی حملے میں ایک فلسطینی شہید ہوگیا، جس کے بعد 24 گھنٹوں کے دوران سرائیلی کارروائیوں میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 5 ہوگئی ہے.

اسرائیلی فوج نے ایک بیان میں ان حملوں کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ اس نے فلسطینی علاقے سے اپنے جنوبی علاقوں کی جانب راکٹوں کی بوچھاڑ کے بعد پوری غزہ کی پٹی میں فضائی حملے کیے ہیں.

(جاری ہے)

اسرائیل کا کہنا ہے کہ غزہ کی پٹی سے اس کے علاقوں کی جانب 80 راکٹ اور مارٹر فائر کیے گئے ہیں، مگر انھیں میزائل دفاعی نظام نے ناکارہ بنا دیا تھا. عرب نشریاتی ادارے کے مطابق غزہ میں اسرائیلی فوج کے خصوصی دستوں نے ایک چھاپا مار کارروائی کی تھی جس کے دوران میں 8 فلسطینی شہید ہوگئے تھے.فلسطینی مجاہدین کے ساتھ جھڑپ میں اسرائیلی فوج کا ایک افسر ہلاک ہوگیا .

غزہ میں تشدد کے ان واقعات کے بعد حماس اور اسرائیل کے درمیان پائیدار جنگ بندی کے لیے گذشتہ کئی ہفتوں سے جاری مصر کی مصالحتی کوششیں رائیگاں جانے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے. اسرائیل اور غزہ کے درمیان کشیدگی میں اضافے کے بعد صہیونی وزیراعظم بنیامین نیتن یاہو اپنا فرانس کا دورہ مختصر کرکے لوٹ آئے ہیں. اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں 8 مقامات پر بمباری کی اور سرکاری املاک کو نشانہ بناتے ہوئے کئی عمارتیں مکمل طورپر تباہ کر دیں.

غزہ میں حماس کے عسکری ونگ القسام بریگیڈ نے کہا ہے کہ اگر اسرائیل نے غزہ پر بمباری جاری رکھی تو اسرائیل کے تمام شہروں کو راکٹ حملوں سے نشانہ بنایا جائے گا. اسرائیلی ذرائع کا کہنا ہے کہ فوج غزہ کی پٹی پر فضائی حملوں کا نیا سلسلہ شروع کرنے کی تیاری کر رہی ہے‘ اسرائیل کے ایک سیاسی ذریعے نے بتایا کہ وزیراعظم کی زیرصدارت اجلاس میں ہونے والی مشاورت مکمل کرلی گئی ہے.

اجلاس میں وزیر دفاع اور فوج کی قیادت بھی موجود تھی‘ اجلاس میں غزہ کی سرحد پر کشیدگی اور فلسطینیوں کے راکٹ حملوں پر جوابی کارروائی پر اتفاق کیا گیا. اسرائیلی ٹی وی کے مطابق فوج کو غزہ میں حماس اور اسلامی جہاد کے ٹھکانوں پر تباہ کن حملے کرنے کے احکامات دیے گئے ہیں. صہیونی حکام کا کہنا ہے کہ ہم راکٹ حملوں کا سامنا کررہے ہیں‘ بری فوج کی بڑی تعداد غزہ کی پٹی کی سرحد پر جمع کردی گئی ہے‘ ٹینک اور دیگر فوجی گاڑیاں بھی بڑے زمینی حملے کے لیے سرحد پر تعینات کی جا رہی ہیں.

اسرائیلی فوج نے غزہ کی پٹی میں حماس کے زیرانتظام الاقصیٰ ٹی وی چینل کی عمارت مکمل طورپر تباہ کردی‘ اسرائیلی فوج نے اس عمارت پر 6 میزائل برسائے جس کے نتیجے میں عمارت ملبے کا ڈھیر بن گئی‘ اسرائیلی بمباری کے بعد الاقصیٰ ٹی وی چینل کی نشریات بند ہوگئی ہیں.