مت میلادالنبی کے جلسے جلوسوں کی فول پروف سیکورٹی یقینی بنائے،میلادالنبی کے ہر پروگرام کو تحفظ ناموس رسالت کے عنوان سے منایا جائے گا،حامد رضا

منگل نومبر 21:25

مت میلادالنبی کے جلسے جلوسوں کی فول پروف سیکورٹی یقینی بنائے،میلادالنبی ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 نومبر2018ء) سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ حکومت میلادالنبی کے جلسے جلوسوں کی فول پروف سیکورٹی یقینی بنائے۔ میلادالنبی کے ہر پروگرام کو تحفظ ناموس رسالت کے عنوان سے منایا جائے گا۔ وزیراعظم پاکستان کو ریاست مدینہ بنانے کے لئے عید میلادالنبی کے موقع پر نفاذ نظام مصطفے کا اعلان کریں۔

حکومتی سطح پر میلادالنبی منانے کا اعلان اور قومی سیرت کانفرنس کو ختم نبوت سے منسوب کرنا خوش آئند ہے۔ ربیع الاول کے دوران ملک بھر میںفروغ عشق رسول مہم جاری رہے گی۔ وفاقی اور صوبائی حکومت میلادالنبی کے اجتماعات کے سیکورٹی کے معاملے پر تنظیمات اہل سنت کی قیادت کو اعتماد میں لے۔ سنی اتحاد کونسل 12 ربیع الاول کو عید میلادالنبی کے دس ہزار جلوسوں کا اہتمام کرے گی۔

(جاری ہے)

ولادت رسول کی خوشی میں غریب بستیوں میں کھانا، ہسپتالوں، جیلوں اور یتیم خانوں میں میلاد گفٹ تقسیم کئے جائیں گے۔ عید میلادالنبی کے پروگراموں کے سلسلہ میں ضلعی سطح پر کمیٹیاں قائم کر دی گئی ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انھوں نے جامعہ رضویہ میں عید میلادالنبی کی تیاریوں کے سلسلہ میں منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صاحبزادہ حامد رضا نے مزید کہا کہ حضور نبی کریم کی سیرت اپنانا اور میلاد منانا عاشقان رسول کی شناخت ہے۔

اطاعت رسول کے بغیر حب رسول کا دعوی بے معنی ہے۔ کوئی سچا عاشق رسول انتہا پسند اور نفرت کا سوداگر نہیں ہو سکتا۔ تعلیمات رسول سے امن و محبت کا درس ملتا ہے۔ حکومت عید میلادالنبی سے پہلے شہروں کی صفائی کے خصوصی انتظامات کرے۔ ربیع الاول کے دوران لوڈشیڈنگ کا مکمل خاتمہ یقینی بنایا جائے۔ 12 ربیع الاول کے ساتھ 11 ربیع الاول کی سرکاری چھٹی کا اعلان کیا جائے۔

11 ربیع الاول کو بعد نماز مغرب ملک بھر میں مشعل بردار جلوس نکالے جائیں گے۔ امت مسلمہ نبی امن و رحمت کی سیرت طیبہ کو مشعل راہ بنا کر عظمت رفتہ بحال کر سکتی ہے۔ اجلاس میں صاحبزادہ حسن رضا، صاحبزادہ حسین رضا، پیر معاذالمصطفے قادری، مفتی حبیب قادری، ملک بخش الہی، علامہ ارشد مصطفائی، مولانا محمد اکبر نقشبندی، پیر میاں غلام مصطفے، راؤحسیب احمد، حاجی رانا شرافت علی قادری، علامہ حامد سرفراز، الحاج سرفراز احمد تارڑ، مفتی مقیم خان اور دیگر نے شرکت کی۔