سینیٹ کی کمیٹیوں کے نظام کو مزید موثر بنانے کی ضرورت ہے، سنجرانی

محدود وسائل اور مشکلات کے باوجود سینیٹ سیکرٹریٹ نے بہتر سروسز فراہم کی ہیں،زیادہ بااختیار ایوان وفاقی اکائیوں کی موثر آواز بن کر سامنے آئیگا، چیئرمین سینیٹ کا اجلاس سے خطاب

منگل نومبر 22:55

سینیٹ کی کمیٹیوں کے نظام کو مزید موثر بنانے کی ضرورت ہے، سنجرانی
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 نومبر2018ء) چیئرمین سینیٹ محمد صادق سنجرانی نے سینیٹ کے کمیٹی نظام کو مزید موثر بنانے پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ قانون سازی اور حکومتی جوابدہی کیلئے سینیٹ اور اس کی کمیٹیوں کو زیادہ بااختیار بنانے کی ضرورت ہے تاکہ ملک میں بہتر طرز حکمرانی کو مزید موثر بنایا جا سکے ،محدود وسائل اور مشکلات کے باوجود سینیٹ سیکرٹریٹ نے بہتر سروسز فراہم کی ہیں۔

پارلیمنٹ ہائوس میں سینیٹ کی قائمہ کمیٹیوں پر مشتمل کونسل آف چیئرمین کے اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ سینیٹ وفاق کا ایوان ہے اور زیادہ بااختیار ایوان وفاقی اکائیوں کی موثر آواز بن کر سامنے آئے گا۔ انہوں نے اس بات کا بھی عندیہ دیا کہ حکومت سے اس امر پر مشاورت کی جائیگی کہ سینیٹ کو اور زیادہ بااختیار بنایا جائے تاکہ ملک میں جمہوریت کی بنیادیں مزید مستحکم کرنے کی جانب قدم بڑھایا جا سکے۔

(جاری ہے)

اراکین کی تجاویز کے ساتھ اتفاق کرتے ہوئے چیئرمین سینیٹ نے ممبران اور سٹاف کی استعداد کار بڑھانے کا عمل ترجیحات میں شامل کیا ہے اور اس کے لئے مختلف اقدامات زیرغور ہیں۔ انھوں نے کہا کہ سینیٹ سیکرٹریٹ بہتر خدمات فراہم کرنے کے لئے کوشاں ہے۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی کے اجلاس منعقد کرانے میں زیادہ کمیٹی رومز میسر نہ ہونے کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہے۔

تاہم اس سلسلے میں مختلف اقدامات زیرغور ہیں۔ انہوں نے سینیٹ سیکرٹریٹ کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ محدود وسائل اور مشکلات کے باوجود سینیٹ سیکرٹریٹ نے بہتر سروسز فراہم کی ہیں۔ انہوں نے حال ہی میں گوادر میں منعقدہ ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کی سیاسی امور کی قائمہ کمیٹی کے اجلاس کے کامیابی سے انعقاد پر سینیٹ سیکرٹریٹ کی تعریف کی اور کہا کہ مشکلات کے باوجود سینیٹ سیکرٹریٹ نے بہتر نتائج دیئے۔

ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا، سینیٹ میں قائد ایوان سینیٹر شبلی فراز، سینیٹ میں قائد حزب اختلاف راجہ محمد ظفر الحق نے کمیٹی نظام کو موثر بنانے کی ضرورت پر زور دیا۔ اس موقع پر سینیٹ کی قائمہ کمیٹیوں کے چیئرمین، سیکرٹری سینیٹ امجد پرویز ملک اور اعلیٰ حکام بھی موجود تھے۔