آپ سائیکلوں پر گھومتے تھے ، آپ کی اوقات ہی کیا ہے،تم سے زرداری اچھا ہے بھاگا تو نہیں

اسحاق ڈار کی جانب سے تلخ جملہ آنے کے بعد پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی زید پھٹ پڑے

Syed Fakhir Abbas سید فاخر عباس منگل نومبر 23:00

آپ سائیکلوں پر گھومتے تھے ، آپ کی اوقات ہی کیا ہے،تم سے زرداری اچھا ..
راولپنڈی(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔13نومبر2018ء) سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی جانب سے علی زیدی پر جملہ کسنے کے بعد تحریک انصاف کے وزیر سید علی زیدی نے اسحاق ڈار کو کھری کھری سنا دیں۔علی زید کا کہنا تھا کہ تم ملک سے بھاگے ہوئے مجھے شرم دلاو گے،شرم تمہیں آنی چاہیے ہے۔انکا کہنا تھا کہ لندن میں ٹیکسیوں کے پیچھے بھاگتے ہو اور یہاں کہتے ہو کہ میں بیمار ہوں ۔

اگر تم میں ہمت ہے تو مجھ پر ہرجانے کا دعویٰ دائر کرو اور مجھے عدالت لے جاو۔تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے وفاقی وزیر سید علی زیدی اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار میں جھڑپ ہوگئی۔اس موقع پر جب سید علی زیدی نے اسحاق ڈار پر الزامات لگائے تو اسحاق ڈار نے اینکر ندیم ملک سے کہا کہ انکو بات کرنے دیں میں انکی بات کا جواب نہیں دینا چاہتا ،آپ مجھ سے آئی ایم ایف سے متعلق سوال کریں ۔

(جاری ہے)

اس پر علی زیدی غصے میں آ گئے اور کہا کہ کیا آپ آسمان سے آئے ہیں۔آپ مفرور ہیں،آپ کیسے ٹی وی پر بیٹھ کر ملک کے باہر سے باتیں کر رہے ہیں۔انہوں نے اسحاق ڈار کو کہا کہ آپ مجھ پرہرجانے کا دعویٰ کیوں نہیں دائر کرتے میں تمہیں بتاوں گا کہ تم نے مال کہاں سے بنایا۔آپ مجھے کہتے ہیں کہ تمہیں شرم آنا چاہیے کہ تم اس ملک کا پیسہ کھا کر اور اربوں روپے کا قرض لے کر بھاگ گئے ہو۔

آپ کی اوقات ہی کیا ہے آپ معمولی سے اکاونٹنٹ تھے اور سائیکل پر گھومتے تھے۔آپ کیا لگتا ہے مسٹر ڈار کہ آپ کون ہیں آپ چور اور بس چور ہیں۔انہوں نے کہا مجھے تو حیرانگی ہے کہ کس طرح ندیم ملک جیسے سینئیر اینکر نے آپکو شو میں دعوت دے دی ، آپکو ٹی وی پر نہیں جیل میں ہونا چاہیے۔اس پر اینکر ندیم ملک نے مداخلت کرتے ہوئے کہا کہ آپ دونوں ہمارے لیے قابل احترام ہیں تو علی زیدی بولے کہ میرے لیے یہ شخص قابل احترام نہیں۔انہوں نے کہا کہ تم مجرم ہو، میں ابھی بھی پاکستان میں ہوں ۔تم سے تو آصف زرداری بہتر ہے کم از کم ملک سے بھاگا تو نہیں۔علی زیدی اور اسحاق ڈار میں مزید کن تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا ویڈیو ملاحظہ کریں۔