وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے چلاس200بیڈ ہسپتال کی تعمیر میں تاخیر کا نوٹس لے لیا

منگل نومبر 23:50

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے چلاس200بیڈ ہسپتال کی تعمیر میں تاخیر کا نوٹس ..
گلگت۔13 نومبر(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 13 نومبر2018ء) وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے چلاس200بیڈ ہسپتال کی تعمیر میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ اس منصوبے کو جلد مکمل کرنے کے احکامات دیئے گئے ہیں۔ عوامی مفاد کا یہ اہم منصوبہ محکمہ صحت سے محکمہ تعمیرات سپرد کیا جارہاہے۔ محکمہ تعمیرات اس منصوبے کی جلد از جلد تکمیل کو یقینی بنائیں اور کام میں تیزی لائی جائے۔

چلاس فیملی اور چائلڈ ونگ کی تعمیر کو مارچ تک مکمل کیا جائے۔ محکمہ صحت چلاس فیملی اور چائلڈ ونگ کیلئے درکار مشینری کی خریداری کا آغاز کرے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا ہے کہ بونجی پل کی جلد از جلد تعمیر کے حوالے سے سیکریٹری تعمیرات کو ہدایت کی ہے کہ اس منصوبے کی جلد از جلد تکمیل کیلئے ورک پلان تیار کیا جائے اور دس دنوں میں ورک پلان کے حوالے سے وزیر اعلیٰ سیکریٹریٹ میں رپورٹ پیش کی جائے۔

(جاری ہے)

بونجی پل کے تعمیر شدہ گارڈرز کا معائنہ کرایا جائے۔ محکمہ تعمیرات متعلقہ ٹھیکیدار کو اس بات کا پابند بنایا جائے کہ بونجی پل منصوبے کا کام جلد از جلد مکمل کیا جائے اس اہم منصوبے میں غیرضروری تاخیر کی صورت میں متعلقہ ٹھیکیدار کیخلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے دیامر اور استور کے ترقیاتی منصوبوں کے حوالے سے منعقدہ اعلیٰ سطحی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے محکمہ تعمیرات کے متعلقہ آفیسران کو ہدایت کی ہے کہ چلاس کے شاہراہوں کی تزائن و آرائش کے کاموں کو جلد از جلد مکمل کیا جائے اور 24انچ واٹر سپلائی سکیم چلاس کا منصوبہ مقررہ 20کروڑ لاگت میں مکمل کیا جائے اور اس منصوبے کا فیز IIمتعلقہ فورم میں منظوری کیلئے پیش کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمن نے کہا کہ عوامی مفاد کے منصوبوں کی تعمیر میں غیر ضروری تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی ۔ صوبے میں جاری تمام ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل کو یقینی بنایا جائے مانیٹرنگ کے نظام کو بہتر بنایا جائے تاکہ منصوبوں کا معیار یقینی ہو۔

متعلقہ عنوان :