ڈاکٹر عافیہ کی رہائی کیلئے سینیٹ میں قرارداد منظور

حکومت عافیہ صدیقی کی جلد وطن واپسی کے لیے اقدامات کرے ،ْقرارداد پاکستانی حکومت عافیہ صدیقی کے معاملے پر امریکی حکومت کے ساتھ رابطے میں ہے ،ْترجمان دفتر خارجہ

جمعرات نومبر 17:38

ڈاکٹر عافیہ کی رہائی کیلئے سینیٹ میں قرارداد منظور
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 15 نومبر2018ء) ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے سینیٹ میں قرارداد منظور کرلی گئی۔ جمعرات کوسینیٹ کا اجلاس چیئرمین صادق سنجرانی کی سربراہی میں ہوا جس میں جے یو آئی (ف) کے سینیٹر طلحہٰ محمود نے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے قرارداد پیش کی جسے ایوانِ بالا نے منظور کرلیا۔قرارداد کے متن میں کہا گیا کہ سینیٹ عافیہ صدیقی کی مسلسل قید پر اظہار تشویش کرتا ہے، ضرورت ہے کہ عافیہ کی رہائی کا معاملہ دوبارہ امریکا سے اٹھایاجائے۔

قرارداد میں مطالبہ کیا گیاکہ حکومت عافیہ صدیقی کی جلد وطن واپسی کے لیے اقدامات کرے۔چیئرمین سینیٹ نے عافیہ صدیقی کی رہائی سے متعلق منظور قرار داد دفتر خارجہ کو بھیجنے کی ہدایت کی اور کہا کہ حکومت قرارداد کی روشنی میں عافیہ صدیقی کی وطن واپسی کے لیے اقدامات کرے۔

(جاری ہے)

دوسری جانب ترجمان دفتر خارجہ نے عافیہ صدیقی کے حوالے سے کہا کہ پاکستانی قونصل خانہ ہیوسٹن میں گزشتہ تین سال میں 12 مرتبہ ڈاکٹر عافیہ سے ملاقات کرچکا ہے۔

ترجمان کے مطابق پاکستانی حکومت عافیہ صدیقی کے معاملے پر امریکی حکومت کے ساتھ رابطے میں ہے اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کی بہن فوزیہ صدیقی سے ملاقات بھی کی ہے۔واضح رہے کہ امریکا میں قید ڈاکٹر عافیہ صدیقی نے وزیراعظم عمران خان کے نام ایک خط لکھا ہے جس میں انہوں نے اپنی رہائی کی اپیل کی ہے ،ْاس کے علاوہ پاکستان نے امریکی نائب وزیر خارجہ ایلس ویلز کے دورہ پاکستان میں بھی عافیہ صدیقی کا معاملہ اٹھایا اور کہا کہ عافیہ صدیقی سے متعلق تمام تر بنیادی انسانی حقوق کو مدنظر رکھا جائے۔میڈیا رپورٹ کے مطابق پاکستان خاتون ڈاکٹر عافیہ صدیقی ایک سائنسدان ہیں، جن پر افغانستان میں امریکی فوجیوں پر حملے کا الزام ہے۔