لاہور، احتساب عدالت میں 11ارب کے ایم این ایم موٹر سائیکل کرپشن کیس میں ملوث ملزم کی 8 لاکھ 80 ہزار روپے کی پلی بارگین کی درخواست منظور

جمعہ نومبر 21:30

لاہور، احتساب عدالت میں 11ارب کے ایم این ایم موٹر سائیکل کرپشن کیس میں ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2018ء) احتساب عدالت نے 11ارب روپے کے ایم این ایم موٹر سائیکل کرپشن کیس میں ملوث ملزم اعجاز احمد کی 8 لاکھ 80 ہزار روپے کی پلی بارگین کی درخواست منظور کر لی ۔ احتساب عدالت کے ڈیوٹی جج منیر احمد نے ملزم اعجاز احمد کو رہا کرنے کا حکم دے دیا ۔ملزم اعجاز احمدپر الزام ہے کہ اس نے مرکزی ملزم احمد سیال کی معاونت سے عوام سے کروڑوں روپے کی لوٹ کی۔

نیب کے مطابق سہیل سمیت دیگرملزمان خطیر منافع کے لالچ پر عوام سے رقوم بٹورتے رہے۔ ملزمان کی جانب سے نئے کسٹمرز سے وصول رقوم میں سے ہی رقوم پرانے کسٹمرز کو بطور منافع دی جاتی رہی۔ مذکورہ کیس میں مجموعی طور پر 43 ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جا چکی ہے۔ ملزمان نے عوام سے دھوکہ دہی اور منافع کا لالچ دیتے ہوئے لگ بھگ 11 ارب روپے لوٹے۔

(جاری ہے)

دریں اثناء اسی کیس میں ملوث 25 ملزمان کوجیل سے لا کر عدالت میں پیش کیا گیا۔ احتساب عدالت کے ڈیوٹی جج نجم الحسن نے تمام ملزمان کو 11 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ۔ عدالت نے اسی کیس میں ملوث 4 مزید ملزمان یاسر خان ،افتخار ،مظہر اور محمد عابد کو 15روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ۔ عدالت نے ان ملزمان کو یکم دسمبر کو دوبارہ پیش کرنے کا حکم دیا ہے ۔

نیب پراسکیوٹر کی طرف سے ملزمان یاسر اور محمد عابد وغیرہ کے مزید جسمانی ریمانڈ کی بجائے انہیں جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوانے کی استدعا کی ۔ نیب نے بتایا کہ ملزمان نے ایم این ایم موٹر سائیکل کے نام پر ساہیوال میں کمپنی رجسٹرڈ کروائی۔ ملزمان کی جانب سے نئے کسٹمرز سے وصول رقوم میں سے ہی رقوم پرانے کسٹمرز کو بطور منافع دی جاتی رہی۔ تمام ملزمان خطیر منافع کے لالچ پر عوام سے رقوم بٹورتے رہے۔

متعلقہ عنوان :