بلوچستان میں امن قائم ہونے کے بعد صوبے میں ترقی کے سفر کا آغاز ہوچکا ہے، عاصم سلیم باجوہ

بلوچستان کی ترقی میں افواج پاکستان حکومت کے شانہ بشانہ کھڑی ہیں ،کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل

جمعہ نومبر 22:29

بلوچستان میں امن قائم ہونے کے بعد صوبے میں ترقی کے سفر کا آغاز ہوچکا ..
کوئٹہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 16 نومبر2018ء) کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا ہے کہ بلوچستان میں امن قائم ہونے کے بعد صوبے میں ترقی کے سفر کا آغاز ہوچکا ہے، بلوچستان کی ترقی میں افواج پاکستان حکومت کے شانہ بشانہ کھڑی ہیں ،وفاقی و صوبائی حکومتی قیادت بلوچستان کی ترقی میں دلچسپی لے رہی ہیں ،نوجوان محنت کریں اور نئے پاکستان کی بنیاد بلوچستان سے رکھیں ،یہ بات انہوں نے جمعہ کو چمن میں پاکستان کے پہلے اسٹروٹرف کرکٹ گراونڈ کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہی ،اس موقع پر مشیر کھیل و ثقافت عبدالخالق ہزارہ ،آئی جی ایف سی میجر جنر ل ندیم احمد انجم ،قبائلی و سیاسی رہنمائوں اور شاحقین کی بڑی تعداد بھی موجود تھی ، کمانڈر سدرن کمانڈ نے کہا کہ بلوچستان میں ہر طرف امن نظر آرہا ہے یہاں ترقی کادورشروع ہوچکا ہے انہوں نے کہا کہ بلوچستان کی حکومت اور عوام ترقی کے خواہاں ہیں ، عوام اچھا ماحول ،تعلیمی ادارے کھیل کے میدان، پختہ سڑکیں چاہتے ہیں افواج نے امن و ترقی کے لئے حکومت کو یقین دہانی کروائی ہے جہاں بھی ترقی کا کام ہوگا ہم حکومت کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں،سی پیک ہو یا کوئی اور منصوبہ ہو ہماری آنے والی نسلوں نے ان سے استفادہ حاصل کرنا ہے ،نوجوانوں محنت کریں اور آنے والے مواقعوں سے فائدہ اٹھاتے ہوئے بلوچستان سے نئے پاکستان کی بنیاد رکھیں اور ترقی میں حصہ لیں،انہوں نے کہا کہ یہ محظ ایک اسٹیڈیم نہیں بلکہ چمن کا روشن چہرہ ہے جلد ہی چمن اسٹیڈیم میں قومی کھلاڑیوں کو مدعو کریں گے،انہوں نے کہا کہ حکومت کے ساتھ رابطے میں رہتے ہوئے ترقیاتی منصوبوں کی تمام منصوبہ بندی کو دیکھ رہا ہوں ،وفاقی و صوبائی حکومتیں صوبے کی ترقی میں دلچسپی لے رہی ہیں چمن کے لیے پیکج کی منصوبہ بندی ہو چکی ہے ،فنڈز کا اجراء ہوتے ہی ترقیاتی کاموں کو آغاز ہوگا،انہوں نے کہا کہ عوام چمن اور مضافا ت کے علاقوں میں مستقبل قیام امن کیلئے سکیورٹی فورسز کی ساتھ دیں ۔

(جاری ہے)

انہوں نے آئی جی ایف سی کی کاوشوں کو خراج تحسین پیش کیا اور گرائونڈ کو صوبائی کرکٹ ایسوسی ایشن کے حوالے کیا۔۔