امیر تبلیغی جماعت حاجی عبد الوہاب مسلم دنیا کی 10 ویں بااثر شخصیت تھے

حاجی عبد الوہاب نے تبلیغ اور دعوت کی محنت کے لئے نوکری چھوڑ دی تھی

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین پیر نومبر 16:17

امیر تبلیغی جماعت حاجی عبد الوہاب مسلم دنیا کی 10 ویں بااثر شخصیت تھے
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 19 نومبر 2018ء) : امیر تبلیغی جماعت حاجی عبدالوہاب طویل علالت کے بعد گذشتہ روز انتقال کرگئے۔حاجی عبدالوہاب کا شمار مسلم دنیا کی 500 سو با اثر شخصیات میں ہوتا تھا اور اس فہرست میں حاجی عبد الوہاب 10 ویں نمبر پرتھے۔ ان کا پورا نام راؤ محمد عبدالوہاب اورآبائی علاقہ سہارن پور تھا۔ حاجی عبد الوہاب یکم جنوری 1923ء کو دہلی میں پیدا ہوئے۔

ہجرت کے بعد پاکستان آئے اورچک نمبر 331 بورے والا ضلع وہاڑی میں رہائش پذیر رہے۔ ان کا تعلق راجپوت راؤ برادری سے تھا، انہوں نے اسلامیہ کالج لاہور سے گریجوایشن کے بعد تحصیلدار کی حیثیت سے فرائض سرانجام دئے اوربعد ازاں تبلیغ اور دعوت کی محنت کے لئے اپنی نوکری چھوڑ دی۔ حاجی عبد الوہاب تبلیغی جماعت کے تیسرے امیر تھے۔

(جاری ہے)

مولانا عبد الوہاب نے 1944ء میں مرکز مولانا نظام الدین انڈیا میں تبلیغی جماعت کے بانی مولانا الیاس کاندھلوی سے ملاقات کی اور 6 ماہ تک ان کی خدمت میں رہے۔

ان کا روحانی تعلق مولانا عبدالقادر رائے پوری سے تھا۔ حاجی عبد الوہاب نے اپنی پوری زندگی تبلیغ دین کے لیے وقف کردی ، انہوں نے تحریک ختم نبوت ﷺ میں بھی بڑھ چڑھ کر حصہ لیا۔ محمد شفیع قریشی تبلیغی جماعت کے پہلے ، حاجی محمد بشیر دوسرے جبکہ حاجی عبدالوہاب تیسرے امیرتھے ۔ انہوں نے مدرسہ عربیہ المعروف تبلیغی مرکز رائیونڈ میں 32 سال تک بچوں کو دین کی تعلیم دی اوراپنی تمام زندگی سادگی اور اﷲ اور اس رسول ﷺ کے بتائے ہوئے اصولوں پر گزاری۔

حاجی عبد الوہاب طویل عرصہ سے علیل تھے،وہ سانس اور سینے کے عارضہ میں مبتلا تھے ، چند روز قبل انکوڈینگی بخار ہوگیا جس کے بعد انہیں آئی سی یو منتقل کیا گیا۔تبلیغی مرکز رائے ونڈ کے اعلامیہ کے مطابق مولانا عبدالوہاب نجی اسپتال میں زیر علاج تھے لیکن گذشتہ روز ان کا انتقال ہو گیا۔ حاجی عبد الوہاب کے جنازے میں شرکت کے لیے ملک بھر سے لوگ لاہور پہنچے۔

حاجی عبدالوہاب کی نماز جنازہ بعد از مغرب رائیونڈ مرکز سے ایک کلومیٹر کے فاصلے پر سندر روڈ پر موجود تبلیغی اجتماع کے پنڈال میں ادا کی گئی۔ امیر تبلیغی جماعت پاکستان حاجی عبدالوہاب کی نماز جنازہ مولانا نذر الرحمن نے پڑھائی جس میں لاکھوں لوگوں نے شرکت کی ۔ان کی نماز جنازہ سندر روڈ اجتماع گاہ پنڈال میں پڑھائی گئی جس کے بعد ان کی وصیت کے مطابق انہیں تبلیغی مرکز کے قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا۔

تبلیغی مرکز رائے ونڈ میں اپنے آخری خطاب میں گفتگو کرتے ہوئے مولانا عبد الوہاب نے کہا کہ اس اجتماع کا مقصد امت مسلمہ کو دین کے راستے میں ڈالنا اور سچے مسلمان بنانا ہے۔آپ سب بھی اس کار خیر کا حصہ بنیں اور اللہ کے دین کو دوسروں تک پہنچائیں۔تبیلیغی اجتماع دین سکھانے کی تربیت گاہ ہے۔انہوں نے کہا تھا کہ مسلمانوں کی ذلت توبہ سے ختم ہو گی،امت پر آفتیں دین سے دوری کی وجہ سے نازل ہو رہی ہیں۔پریشانیوں سے نجات اللہ کی راہ میں نکلنے میں ہے۔اللہ تعالیٰ اور اس کے نبی ﷺ کا پیغام دوسروں تک پہنچانا ہم سب کا فرض ہے۔