صوبائی وزیر تعلیم کا بوائز سکولوں میں خواتین اساتذہ کی تعیناتی پر نوٹس

خواتین اساتذہ کو صرف گرلز سکولوں میں ہی تعینات کیا جائے، بوائز سکولوں میں تعیناتی کے باعث خواتین اساتذہ کو ہراساں کرنے کے واقعات میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے، رانا مراد راس

منگل نومبر 17:38

صوبائی وزیر تعلیم کا بوائز سکولوں میں خواتین اساتذہ کی تعیناتی پر نوٹس
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 نومبر2018ء) صوبائی وزیر تعلیم رانا مراد راس نے بوائز سکولوں میں خواتین اساتذہ کی تعیناتی پر نوٹس لیتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین اساتذہ کو صرف گرلز سکولوں میں ہی تعینات کیا جائے گا۔

(جاری ہے)

خواتین اساتذہ کی بوائز سکولوں میں تعیناتی کے باعث خواتین اساتذہ کو ہراساں کرنے کے واقعات میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے گزشتہ روز گورنمنٹ سنٹرل ماڈل سکول لوئر مال کے دورے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیرنے کہا کہ سرکاری سکولوں کی حالت زار کو بہتر بنانے کیلئے حکومت کے 100 دن کے پلان کے بعد عمل درآمد شروع کیا جائے گا۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ سنٹرل ماڈل سکول جس کا معیار بہت بلند تھا وہ بھی ان دنوں مختلف مشکلات کا شکار ہے۔ انہوں نے کہا کہ 100 دن کے بعد جب فنڈز ریلیز ہوں گے تو پنجاب حکومت سرکاری سکولوں کی حالت زار کو بہتر بنانے میں کامیاب ہو جائے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ پنجاب ایجوکیشن فائونڈیشن کو اپنے اثاثہ جات کی تفصیلات فراہم کرنی چاہیے جبکہ آمدنی سے زائد اثاثہ جات رکھنے والے اساتذہ سے بھی ان کی آمدنی سے متعلق تفصیلات طلب کی جائے گی۔

متعلقہ عنوان :