او آئی سی کشمیریوں کی جائز جدوجہد کی مکمل حمایت جاری رکھے گی، یوسف العثیمین

او آئی سی سیکرٹریٹ میں پاکستانی قونصلیٹ کے اشتراک سے سیمینار اور تصویری نمائش ، بین الاقوامی برادری کشمیریوں کے حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کیلئے کمیشن آف انکوائری کے قیام کی سفارش کرے، شہریار اکبر خان

منگل نومبر 21:27

او آئی سی کشمیریوں کی جائز جدوجہد کی مکمل حمایت جاری رکھے گی، یوسف العثیمین
جدہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 نومبر2018ء،نمائندہ خصوصی،ایم خوشحال شریف،جدہ) اسلامی تعاون تنظیم کے سیکریٹری جنرل ڈاکٹر یوسف بن احمد العثیمین نے کہا ہے کہ اوآئی سی کشمیر یوں کی جائز جدوجہد کی مکمل حمایت جاری رکھے گی ۔ وہ او آئی سی سیکرٹریٹ میں پاکستانی قونصلیٹ کے اشتراک سے منعقدہ سیمینار اور تصویری نمائش کی صدارت کررہے تھے۔ سیمینار کا عنوان”کشمیریوں کا خون بہہ رہا ہے“رکھا گیا تھا۔



سیکریٹری جنرل نے مزید کہا کہ ہندوستانی حکومت کشمیری عوام کے خلاف طاقت کا استعمال روکے۔ انہوں نے کشمیر کے لوگوں کی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جموں و کشمیر کا مسئلہ گزشتہ 3 دہائیوں سے او آئی سی کے سب سے اہم ایجنڈے میں سے ایک ہے۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر العثیمین نے وزیر اعظم پاکستان سے اپنی ملاقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ملاقات میں کشمیرکا تذکرہ سرفہرست تھا ۔

کشمیر کے مسئلے پر وزیراعظم عمران خان کو او آئی سی کی جانب سے مکمل حمایت کی یقین دہانی بھی کرائی ۔قبل ازیں استقبالیہ تقریر میں قونصل جنرل شہریار اکبرخان نے کہا کہ یوم سیاہ کشمیر کا انعقاد 1947 میں کشمیر میں ہندوستانی افواج کے غیر قانونی قبضے کے سلسلے میںکیا جاتا ہے۔

قونصل جنرل نے او آئی سی ، سعودی عرب اور او آئی سی کے رکن ممالک کا کشمیری عوام کی جدوجہد میں حمایت پر شکریہ ادا کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ پاکستانی حکومت کشمیری عوام کی تاریخی جدوجہد میں تمام تر اخلاقی، سیاسی اور سفارتی تعاون جاری رکھے گی۔انہوں نے بین الاقوامی برادری سے اپیل کی کہ کشمیریوں پر غاصبانہ قبضے کو ختم کرائے اور ہندوستان کو انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں بند کرنے پر مجبور کیا جائے۔ انھوں نے کہا کہ بین الاقومی برادری اقوام متحدہ کی رپورٹ کی سفارشات کے تحت انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی تحقیقات کرنے کیلئے ایک کمیشن آف انکوائری کے قیام کی سفارش کرے۔

کشمیریوں کے حقیقی نمائند ے اور آل پارٹیز حریت کانفرنس کے کنوینر غلام محمد صفی نے کشمیر میں موجودہ صورتحال اور انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بارے میں حاضرین کو آگاہ کرتے ہوئے بین الاقوامی برادری اور خاص طور پر او آئی سی کو اپنا بھرپور کردار ادا کرنے کی اپیل کی تاکہ کشمیری اپنا حق خود ارادی حاصل کر سکیں۔جدہ کشمیر کمیٹی کے ارکان نے صدر کشمیر کمیٹی مسعودپوری کی سربراہی میں سیکریٹری جنرل کو ایک قرارداد پیش کی ا ور او آئی سی کو کشمیر کا مسئلہ حل کرانے کی کوششوں کو مزید تیز کرنے کی استدعا کی۔

واضح رہے کہ او آئی سی سیکریٹریٹ میں کشمیر پر تصویری نمائش اور سیمینار گزشتہ 5 برسوں سے سالانہ بنیادوں پرمنعقد کیاجاتا ہے۔تقریب میں او آئی سی کے سیکرٹری جنرل کے خصوصی نمائندے سفیر عبد اللہ عالم سمیت سعودی اعلیٰ عہدیداران اور مختلف ممالک کے سفارتی اہلکاروں اور پاکستان کمیونٹی کے ارکان نے شرکت کی۔