․برطانیہ نے منی لانڈرنگ اور منظم جرائم کے خلاف کریک ڈائون کے تحت 20 لاکھ پائونڈ کی سرمایا کاری پرٹائر- 1 ویزوں کا اجراء روک دیا

7 دسمبر کے بعد برطانیہ میں سرمایہ کاری کرنی کے خواہشمند غیر ملکیوں کے لئے اپنے سرمائے اور بزنس کا برطانوی آڈٹ فرموں سے آڈٹ کروانا ضروری ہو گا، برطانوی وزارت داخلہ ’’ان ایکسپلین ویلتھ آرڈرز‘‘کے استعمال کو وسیع کرنے کا فیصلہ، بدعنوان سیاسی افراد کو گرفتار بھی کیا جا سکے گا کرپٹ اشرافیہ کی گندی دولت کی برطانیہ میں اب کوئی جگہ نہیں، وزیر امیگریشن

جمعرات دسمبر 18:28

لندن ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 دسمبر2018ء) برطانیہ نے منی لانڈرنگ اور منظم جرائم کے خلاف کریک ڈائون کی مہم کے تحت 20 لاکھ پائونڈ کی سرمایا کاری پرٹائر- 1(گولڈن) ویزوں کا اجراء روک دیا ہے۔ برطانوی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ترجمان وزارت داخلہ کے مطابق7 دسمبر کے بعد برطانیہ میں سرمایہ کاری کرنے کے خواہشمند غیر ملکیوں کے لئے اپنے سرمائے اور بزنس کا برطانیہ میں رجسٹرڈ آڈٹ فرموں سے آڈٹ کروانا ضروری ہو گا، منی لانڈرنگ اور منظم جرائم کے خلاف کریک ڈائون کی مہم کے تحت 20 لاکھ پائونڈ) 2.55 ملین ڈالر)کی سرمایا کاری پر ٹائر۔

1 (گولڈن) ویزوں کا اجرائ( آج )جمعہ کی نصف شب کو مکمل طور روک دیا جائے گا۔برطانوی وزارت داخلہ کے مطابق گزشتہ سال برطانیہ کو ٹائر۔

(جاری ہے)

ون ویزوں کی 1,000 کے قریب درخواستیں موصول ہوئیں تاہم اب صرف گورنمنٹ بانڈ کی خریداری سے ویزا حاصل نہیں کیا جا سکے گا۔گذشتہ دوعشروںکے دوران روسی امراء سے لے کر مشرق وسطی کے آئل برون اور دولت مند چینیوں سمیت ایشیائی افراد نے برطانوی ویزوں کے حصول کے لئے ٹائر- 1ویزوں کے ذریعے برطانوی بانڈز،سٹاک اور لون کیپٹل مارکیٹس میں کروڑوں اربوں پائونڈ کی سرمایہ کاری کی اور برطانوی دارالحکومت لندن کو دنیا کی دوسری بڑی مالیاتی منڈی بنا دیا لیکن اب برطانوی وزیر برائے امیگریشن کیرولین نوکس کے مطابق حکومت کو بعض غیر ملکی سرمائے کے بہائو پر تشویش ہونے لگی ہے جس کے لئے یہ اہم فیصلہ کیا گیا۔

اور اب صرف جینوئن سرمایہ کار ہی برطانیہ میں سرمایہ لگائے گا۔انھوں نے کہاکہ کرپٹ اشرافیہ کی گندی دولت کی برطانیہ میں اب کوئی جگہ نہیںبلکہ ہم ’’ان ایکسپلین ویلتھ آرڈرز‘‘(یو ڈبلیو اوز)کے استعمال کو وسیع کریں گے جس کا مطلب ہے کہ بدعنوان سیاسی افراد اور منظم جرائم کرنے والے غیر ملکیوںکو گرفتار بھی کیا جا سکے گا۔رواں سال اکتوبر میں یو ڈبلیو اوز کا پہلا ہدف جیل میں موجود ایک بینکر کی بیوی تھی جس کی 22 ملین پائونڈ کی جائداد برطانیہ نے ضبط کر لی۔