برطانیہ منی لانڈرنگ کے خاتمے کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرے ،ْچوہدر ی فواد حسین

پاکستان بھارت کے ساتھ کشمیر کے تنازعہ کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنا چاہتا ہے ،ْپاکستان کی جانب سے کرتار پور راہداری کا آغاز ایک اہم اور مثبت اقدام ہے، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے حل کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے ،ْوزیراطلاعات کی برطانوی پارلیمان کے اراکین سے گفتگو

جمعرات دسمبر 22:03

برطانیہ منی لانڈرنگ کے خاتمے کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرے ،ْچوہدر ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 دسمبر2018ء) وزیراطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین نے کہا ہے کہ برطانیہ منی لانڈرنگ کے خاتمے کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرے ،ْپاکستان بھارت کے ساتھ کشمیر کے تنازعہ کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنا چاہتا ہے ،ْپاکستان کی جانب سے کرتار پور راہداری کا آغاز ایک اہم اور مثبت اقدام ہے، بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے حل کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔

جمعرات کو وزیر اطلاعات چوہدری فواد حسین نے برطانوی پارلیمان کا دورہ کیا اور برطانوی پارلیمان کے اراکین سے ملاقات کی۔وزیر اطلاعات نے برطانوی اراکین پارلیمان کو پاکستان تحریک انصاف حکومت کے سماجی اور معاشی اصلاحات کے ایجنڈے کے متعلق آگاہ کیا۔

(جاری ہے)

وزیراطلاعات نے کہا کہ برطانیہ منی لانڈرنگ کے خاتمے کے لیے پاکستان کے ساتھ مل کر کام کرے۔

وزیراطلاعات ونشریات نے ملک میں قانون کی حکمرانی یقینی بنانے کے لیے حکومتی عزم کا اعادہ کرتے ہوئے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت عوام کو غربت سے نجات دلانا چاہتی ہے۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ پاکستان بھارت کے ساتھ کشمیر کے تنازعہ کو مذاکرات کے ذریعے حل کرنا چاہتا ہے۔وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان اور برطانیہ کے مابین خوشگوار تعلقات استوار ہیں،ان تعلقات کو مزید بہتر دیکھنا چاہتے ہیں۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ پاکستان کی جانب سے کرتار پور راہداری کا آغاز ایک اہم اور مثبت اقدام ہے،بھارت سے بھی ایسے ہی مثبت رویے کی توقع کرتے ہیں۔وزیر اطلاعات نے کہاکہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے حل کے لئے اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔