عالمی تجارت پر ڈالر کی اجارہ داری ختم کرنے کی تیاریاں شروع

کئی تجارتی معاملات پر امریکا کی ہٹ دھرمیوں کے بعد یورپ نے امریکی کرنسی کے متبادل پر غور شروع کردیا

muhammad ali محمد علی جمعرات دسمبر 22:07

عالمی تجارت پر ڈالر کی اجارہ داری ختم کرنے کی تیاریاں شروع
پیرس (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 06 دسمبر2018ء) عالمی تجارت پر ڈالر کی اجارہ داری ختم کرنے کی تیاریاں شروع، کئی تجارتی معاملات پر امریکا کی ہٹ دھرمیوں کے بعد یورپ نے امریکی کرنسی کے متبادل پر غور شروع کردیا۔ تفصیلات کے مطابق دنیا میں صنعتی ترقی کا دور شروع ہونے کے بعد گزشتہ کئی دہائیوں سے امریکی کرنسی ڈالر نے عالمی تجارت پر اجارہ داری قائم کر رکھی ہے۔

امریکی ڈالر کی اجارہ داری کے باعث عالمی سطح پر ہونے والی بیشتر تجارت کیلئے امریکی کرنسی کو ہی استعمال کرنا پڑتا ہے۔ اسی ایک عنصر نے امریکی معیشت کی ترقی میں سب سے اہم کردار ادا کیا ہے۔ جبکہ امریکی ڈالر کی اجارہ داری کے باعث ہی امریکا یکطرفہ طور پر دنیا کے کسی بھی ملک پر تجارتی پابندیاں عائد کر دیتا ہے۔

(جاری ہے)

امریکا کے اس رویے نے گزشتہ کچھ عرصے کے بعد دنیا کے سب سے ترقی یافتہ براعظم یورپ کو سب سے زیادہ متاثر کیا ہے۔

اسی باعث اب یورپ نے امریکی کرنسی ڈالر کے متبادل پر غور شروع کردیا ہے۔ اس حوالے سے یورپی کمیشن نے دنیا بھرسے امریکی ڈالر کے اثر کو کسی حد تک کم کرنے کا ایک منصوبہ پیش کیا ہے۔ غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اقتصادی امور کے یورپی کمشنر پیئر ماسکوویسی نے برسلز میں پریس کانفرنس میں واضح کیا کہ تجارتی تنازعات میں جغرافیائی حدود سے باہر امریکی پابندیاں اب تقاضا کرتی ہیں کہ اس کا متبادل ہونا ضروری ہے۔ یہ بھی دیکھا گیا کہ حکومتیں، مالیاتی ادارے اور کثیرالقومی کمپنیاں امریکی پابندیوں کے تناظر میں واشنگٹن حکومت کے رحم و کرم پر ہوتے ہیں۔ یہ امر اہم ہے کہ کئی یورپی اقوام عالمی تجارت پرامریکی ڈالر کے غیرمعمولی اثر سینالاں ہیں۔

متعلقہ عنوان :