میرے دور میں تو ڈالر میری اجازت کے بغیر 10 پیسے بھی اوپر نیچے نہیں ہوتا تھا

وزیراعظم کی منظوری کے بغیر یہ سب نہیں ہونا چاہئیے۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کی غیر رسمی گفتگو

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین جمعہ دسمبر 11:09

میرے دور میں تو ڈالر میری اجازت کے بغیر 10 پیسے بھی اوپر نیچے نہیں ہوتا ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 07 دسمبر 2018ء) : سابق وزیراعظم نواز شریف نے ڈالر کی بڑھتی ہوئی قیمت پر ایک مرتبہ پھر تشویش کا اظہار کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق آج صبح سابق وزیراعظم نواز شریف احتساب عدالت کےسامنے پیش ہوئے جہاں انہوں نے صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ میرے دور میں ڈالر پوچھے بغیر 10 پیسے بھی اوپر نہیں جاتا تھا۔

وزیراعظم کی منظوری کے بغیر یہ ہونا بھی نہیں چاہئیے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دور میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی قدر میں توازن رہا۔ دنیا 2013ء سے 2017ء تک معیشت کو مضبوط اور متوازن کہتی تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ شہباز شریف پہلی مرتبہ کراچی گئے اور فیصل واڈا 500 ووٹوں سے جیتے ، وہ بھی آپ کو معلوم ہی ہے کہ کیسے جیتے تھے، فافن رپورٹ دیکھ لیں، کہتے ہیں کہ ڈالر کو مصنوعی طریقے سے برقرار رکھا تو یہ بھی رکھ لیں۔

(جاری ہے)

یہ بھی بتا دیں کہ ڈالر کی قیمت برقرار رکھنے کا مصنوعی طریقہ ہے کیا۔ آزاد کشمیر کے ایک لڑکے نے بتایا کہ وہاں گیس سلنڈر کی قیمت دگنی ہو گئی ہے۔سی این جی اسٹیشنز پر قطاریں لگی ہوتی ہیں۔ واضح رہے کہ گذشتہ ہفتے ڈالر کی قیمت میں 8 روپے کا اضافہ ہوا تھا جس کے بعد اسٹیٹ بینک نے مداخلت کر کے ڈالر کی قدر میں چار روپے کی کمی کی لیکن رواں کاروباری ہفتے میں ڈالر کی قیمت میں تین مرتبہ اضافہ ہو چکا ہے۔

گذشتہ روز بھی ڈالر کی قیمت میں 14 پیسے کا اضافہ ہو اجس کے بعد ڈالر 138 روپے 74 پیسے پر بند ہوا جبکہ اوپن مارکیٹ میں ڈالر 50 پیسے اضافے کے بعد 139 روپے 30 پیسے پر فروخت ہوا۔یہی نہیں آج بھی ڈالر کی قیمت میں 26 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد انٹربینک میں ڈالر کی قیمت 139 روپے ہو گئی۔ ڈالر کی قیمت میں مسلسل اضافے سے ملک میں مہنگائی کے طوفان کا خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے۔