کراچی، پی آئی اے کے ایئرپورٹ ہوٹل میں لاکھوں کی مبینہ کرپشن کا انکشاف

جمعہ دسمبر 16:19

کراچی، پی آئی اے کے ایئرپورٹ ہوٹل میں لاکھوں کی مبینہ کرپشن کا انکشاف
کراچی(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 07 دسمبر2018ء) پاکستان انٹرنیشنل ایئرلائن(پی آئی ای)کے ایئرپورٹ ہوٹل میں لاکھوں روپے کی مبینہ کرپشن کا انکشاف ہوا ہے، کرپشن سوئمنگ پول، شادی ہال کے لیے بکنگ کی مد میں کی گئی۔تفصیلات کے مطابق پی آئی اے کے ایئرپورٹ ہوٹل میں لاکھوں روپے کی کرپشن کا انکشاف ہوا ہے، قوانین کے مطابق پارٹی کا فکس کرایہ اور کمیشن کی ایڈوانس وصولی لازم ہے، کرایے، کمیشن دونوں مد میں رعایت دیے جانے کی رپورٹ سامنے آئی ہے۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق رعایت دینے کا اختیار صرف کمپنی بورڈ کے پاس ہے، پارٹی کو ہوٹل یا ملازمین کے نام پر 25 فیصد پر بھی بک کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے، کل رقم وصول کیے جانے کے بعد اکائونٹ میں واجب رقم جمع کرائی گئی۔قوانین کے مطابق کسی بھی رسید کا اجرا ایئرپورٹ استقبالیہ سے کرنا لازم ہے تاہم کرپشن کے لیے استقبالیہ کے بجائے رسیدیں مبینہ طور پر الگ سے جاری کی گئیں، فوڈ اینڈ بیوریج منیجر بطور پارٹیز انچارج مبینہ رسیدیں جاری کرنے میں شامل ہیں۔ذرائع کے مطابق آڈیٹرز کو رسید بک سے ہٹ کر دیگر نمبروں کی مبینہ رسیدیں پیش کی گئیں، قوانین کے مطابق وصول کردہ رقم اکانٹ کلوزنگ یا بینک میں جمع نہیں کرائی گئی، رابطے پر ہوٹل کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر عامر مسعود دستیاب نہیں ہوئے۔