برسوں سے کبھی تبدیلی کے نام پراور کبھی سہانے خواب دکھاکرپاکستانی قوم کے ساتھ کھیل کھیلاجارہاہے،عنایت اللہ خان

حقیقی تبدیلی کے لیے نظام کی تبدیلی بہت ضروری ہے، نائب امیر جماعت اسلامی

اتوار دسمبر 21:10

پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 دسمبر2018ء) نائب امیر جماعت اسلامی ، سابق سینئروزیر و ممبر صوبائی اسمبلی خیبرپختونخوا عنایت اللہ خان نے کہا ہے کہ اسلامی قوانین پر عمل پیراہوکر ہی ہم معاشرے میں موجود خرابیوں کاخاتمہ اور ملک وقوم کو ترقی وخوشحالی کی راہ پر گامزن کرسکتے ہیں۔عرب کے اندر بھی ایک معاشرہ تھا جو ہر قسم کی برائیوں سے بھراہواتھا لیکن دین اسلام کے آنے کے بعد وہی معاشرہ امن کا گہوارہ بن گیا۔

تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ اس جیسامعاشرہ پھروجود میں نہیں آیا ،اسی لئے جماعت اسلامی آج بھی اس بات پر یقین رکھتی ہے کہ ملکی تمام مسائل کاحل شریعت کے نفاذ میں ہے اور معاشی ترقی کی ضمانت بھی اسلام پیش کرتا ہے۔وہ پشاور میں مختلف وفود سے بات چیت کر رہے تھے ۔

(جاری ہے)

عنایت اللہ خان نے کہاکہ منفی سیاست ملک وقوم کے لئے نقصان دہ ہے۔ ایک دوسرے کے خلاف بیان بازی کو ختم کرکے اعتماد کی فضاء کو سازگار بنایاجائے۔

ملک کی موجودہ سیاسی صورتحال کے پیش نظر ہر شخص پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے کی بجائے اپناسرمایہ بیرون ملک منتقل کرنا چاہتا ہے۔70برسوں سے کبھی تبدیلی کے نام پراور کبھی سہانے خواب دکھاکرپاکستانی قوم کے ساتھ کھیل کھیلاجارہاہے ۔حقیقی تبدیلی کے لیے نظام کی تبدیلی بہت ضروری ہے۔انہوںنے کہا کہ ہمارا یقین ہے کہ پاکستان میں اسلامی نظام کانفاذ ہوگااور ملک وقوم کودرپیش تمام مسائل حل ہونے کے ساتھ پاکستان کی فضاء میں امن قائم ہوجائے گا