نوٹ-: یہ پیغام 10 دسمبر کی صبح سے قبل شائع یا نشر نہ کیا جائے

آئین پاکستان اس کے تمام شہریوں کو آزادی اور بنیادی حقوق کی ضمانت دیتا ہے، اقوام متحدہ کا چارٹر بغیر کسی رنگ، نسل، زبان اور مذہب کے انسانی حقوق کے احترام کی حوصلہ افزائی اور فروغ کا درس دیتا ہے اور پاکستان اس کی مکمل توثیق کرتا ہے، کشمیر کے لوگ عالمی برادری کی جانب سے کشمیریوں سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کیلئے عالمی برادری کی طرف دیکھ رہے ہیں، عالمی برادری کشمیریوں پربھارتی ظلم و ستم بند کرانے کیلئے کردار ادا کرے صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی کا انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر پیغام

اتوار دسمبر 23:50

اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 09 دسمبر2018ء) صدرمملکت ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ آئین پاکستان اس کے تمام شہریوں کو آزادی اور بنیادی حقوق کی ضمانت دیتا ہے، اقوام متحدہ کا چارٹر بغیر کسی رنگ، نسل، زبان اور مذہب کے انسانی حقوق کے احترام کی حوصلہ افزائی اور فروغ کا درس دیتا ہے اور پاکستان اس کی مکمل توثیق کرتا ہے، کشمیر کے لوگ عالمی برادری کی جانب سے کشمیریوں سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کیلئے عالمی برادری کی طرف دیکھ رہے ہیں، عالمی برادری کشمیریوں پربھارتی ظلم و ستم بند کرانے کیلئے کردار ادا کرے۔

اتوار کو انسانی حقوق کے عالمی دن کے موقع پر اپنے پیغام میں انہوں نے کہا کہ یہ دن عالمی برادری کے ساتھ انسانی حقوق کے حوالہ سے عزم کے اعتراف میں فخر سے منایا جاتا ہے، یہ عزم انسانی حقوق کے آفاقی اعلامیہ کی صورت میں کیا گیا،یہ سال انسانی حقوق کے آفاقی اعلامیہ کا 70واں سال ہے اور بنیادی انسانی حقوق کے تحفظ اور عزم کی تجدید کا تقاضا کرتا ہے۔

(جاری ہے)

صدرمملکت نے کہا کہ برصغیر میں نوآبادیاتی نظام کے خلاف مسلمانوں کی جمہوری جدوجہد سے 1947ء میں پاکستان بنا، یہ انسانی وقار اور بنیادی آزادی کی ایک مثال ہے، اس تصور نے نئے آزاد ہونے والے ہمارے ملک کو 1948ء میں انسانی حقوق کے آفاقی اعلامیہ پر دستخط کرنے والے اولین ممالک کی صف میں لا کھڑا کیا ۔ اقوام متحدہ کا رکن ہونے کے ناتے پاکستان اقوام متحدہ کے چارٹر کی مکمل توثیق کرتا ہے جو بغیر کسی رنگ، نسل، زبان اور مذہب کے انسانی حقوق کے احترام کی حوصلہ افزائی اور فروغ کا درس دیتا ہے، بانی پاکستان قائداعظم محمد علی جناح کے الفاظ ہمارے لئے رہنما اصول ہیں جس میں وہ کہتے ہیں کہ ہم ایک ریاست کے مساوی شہری ہیں اس لئے آئین پاکستان اس کے تمام شہریوں کو آزادی اور بنیادی حقوق کی گارنٹی دیتا ہے۔

صدرمملکت نے کہا کہ حکومت پاکستان ترقی کے مقاصد کو آگے بڑھانے، انسانی حقوق اور جمہوریت اور وفاقی و صوبائی سطح پر ٹریٹی ایمپلیمنٹیشن سیلز کے قیام کے ذریعے عالمی ذمہ داریوں پر عملدرآمد کیلئے بھرپور محنت کر رہی ہے۔ پاکستان متعلقہ ٹریٹی باڈیز کے ساتھ دستخط شدہ کنونشنز پر عملدرآمد کیلئے متعلقہ رپورٹس کو باقاعدگی سے جاری رکھے ہوئے ہے۔

انہوں نے کہاکہ انسانی حقوق کونسل کیلئے 2018ء سے 2020ء کی مدت کیلئے پاکستان کا بطور رکن انتخاب انسانی حقوق کیلئے ہمارے عزم کی عکاسی ہے۔ صدرمملکت نے کہا کہ وہ عالمی برادری کی توجہ مقبوضہ کشمیر میں کشمیریوں کے خلاف بھارتی ظلم و ستم کی طرف دلانا چاہتے ہیں، وہ اقوام متحدہ پر زور دیتے ہیں کہ وہ انسانی حقوق کے آفاقی اعلامیہ میں دیئے گئے تمام انسانی حقوق یقینی بنانے اور اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قراردادوں کی روشنی میں کشمیریوں کو حق خودا رادیت دلانے کیلئے اپنا کردار ادا کریں۔

کشمیر کے لوگ عالمی برادری کی جانب سے کشمیریوں سے کئے گئے وعدوں کی تکمیل کیلئے عالمی برادری کی طرف دیکھ رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کے عالمی دن منانے پر وہ اقوام متحدہ کو سراہتے ہیں جبکہ اس کے ساتھ ساتھ انسانی حقوق کے اس مقدس مشن کیلئے انفرادی اور تنظیمی سطح پر کردار ادا کرنے والوں کا بھی خیرمقدم کرتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ملک میں انسانی حقوق کے تحفظ اور انسانی حقوق کے لئے گورننس سٹرکچر دینے کیلئے وزارت انسانی حقوق کی کاوشوں کو سراہتے ہیں۔