پشاور ہائی کورٹ ایبٹ آباد بینچ نے قتل کیس میں قید ملزم کو عمر قید کی سزا سنا دی

جمعہ دسمبر 19:37

پشاور ہائی کورٹ ایبٹ آباد بینچ نے قتل کیس میں قید ملزم کو عمر قید کی ..
ایبٹ آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 14 دسمبر2018ء) پشاور ہائی کورٹ ایبٹ آباد بینچ نے ہری پور کے موضع پنڈورہ کے اکسن قتل کیس میں ملزم کو عمر قید کی سزا سنا دی۔ اکسن ولد عجب خان کو ملزم نے 2006ء میں آتشیں اسلحہ سے فائرنگ کر کے قتل کر دیا تھا، مدعی کی طرف سے معروف قانون دان مسعود اظہر ایڈووکیٹ نے مقدمہ کی پیروی کی۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق 2006ء میں موضع پنڈورہ میں مقتول اکسن خان ولد عجب خان برطانیہ سے پاکستان آیا اور اپنے ہمراہ اپنے داماد کے سفری کاغذات بنوا کر لایا، 18 نومبر 2006ء کو ملزم فرید اور اس کا بیٹا تیمور خان مقتول اکسن کے گھر واقع دیہہ پنڈوری ہری پور شام 7 بجے آئے۔

دوران جرگہ ملزم فرید خان جو مقتول کا سمدھی تھا، نے مقتول کو کہا کہ تم نے میرے بیٹے کے سفری کاغذات جعلی بنائے ہیں جس پر وہ غصہ میں آیا اور اپنے بیٹے تیمور کو آواز دی کہ اس کو جان سے مار دو جس پر تیمور خان نے پستول سے فائرنگ کر کے مقتول اکسن کو قتل کر دیا اور دونوں ملزمان موقع سے فرار ہو گئے، ملزم تیمور پانچ سال تک مفرور رہا۔ 2011ء میں ملزم کو پولیس نے گرفتار کر لیا جس پر ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت میں مقدمہ چلتا رہا۔ گذشتہ روز عدالت نے کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ملزم کو عمر قید کی سزا سنا دی۔