پاکستان کی پہچان بننے والی کم عمر ترین مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ارفع کریم رندھاوا کی سالگرہ منائی گئی

ارفع کریم نے نو سال کی عمر میں مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کی سند حاصل کی ،بل گیٹس نے بھی خصوصی ملاقات کی

ہفتہ فروری 13:32

پاکستان کی پہچان بننے والی کم عمر ترین مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ..
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 02 فروری2019ء) پاکستان کی پہچان بننے والی کم عمر ترین مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ارفع کریم رندھاوا کی ہفتہ کے روز 24ویں سالگرہ منائی گئی ۔2فروری 1995ء کو فیصل آباد میں ایک ننھی سی کلی کھلی جس کا نام ارفع کریم رندھاوا رکھا گیا۔ ارفع کریم نے صرف نو سال جو بچوں کے کھیلنے کودنے کے دن ہوتے ہیں ،کی عمر میں مائیکروسافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل کی سند حاصل کر کے دنیا بھر میں پاکستانیوں کا سرفخر سے بلند کردیا۔

اس عظیم کامیابی پر 2005ء میں مائیکرو سافٹ کے بانی بل گیٹس نے ارفع کریم کو مائیکرو سافٹ ہیڈکوارٹر بلا کر خصوصی ملاقات میں انہیں سند سے نوازا ۔بچپن سے اپنی حیران کن صلاحیتوں سے سب کو گرویدہ بنانے والی ارفع کریم نے فاطمہ جناح گولڈ میڈل، سلام پاکستان یوتھ ایوارڈ اور صدارتی پرائیڈ آف پرفارمنس ایوارڈ سمیت کئی اعزازات حاصل کرتے ہوئے والدین کا نام روشن کیا۔

(جاری ہے)

پاکستان کی سربلندی کے لیے اپنی خدمات پیش کرنا ننھی عرفہ کا مشن تھا لیکن صرف تیرہ سال کی عمر میں انہیں ذہنی پیچیدگی کا مرض لاحق ہوا اور اسی میں دل کا دورہ پڑنے سے وہ کومہ میں چلی گئیں۔ بل گیٹس نے ارفع کریم کو امریکہ لے جا کر علاج کروانے کی پیشکش بھی کی لیکن وہ سفر کے قابل نہ تھیں اور 14جنوری 2012ء کو خالق حقیقی سے جاملیں ۔