این اے 91 سرگودھا ضمنی الیکشن، ن لیگ اپنی جیتی ہوئی نشست پر شکست کے دہانے پر

پولنگ ختم ہونے کے بعد غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے عامر سلطان چیمہ کو 7 ہزار سے زائد ووٹوں کی برتری حاصل

muhammad ali محمد علی ہفتہ فروری 19:40

این اے 91 سرگودھا ضمنی الیکشن، ن لیگ اپنی جیتی ہوئی نشست پر شکست کے دہانے ..
سرگودھا (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 02 فروری2019ء) این اے 91 سرگودھا ضمنی الیکشن، ن لیگ اپنی جیتی ہوئی نشست پر شکست کے دہانے پر، پولنگ ختم ہونے کے بعد غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے عامر سلطان چیمہ کو 7 ہزار ووٹوں کی برتری حاصل۔ تفصیلات کے مطابق این اے 91 میں 20 پولنگ اسٹیشن پر ضمنی الیکشن ہوا جس کے بعد گنتی کا عمل جاری ہے۔

اب تک موصول ہونے والے غیر سرکاری غیر حتمی نتائج کے مطابق این اے 91 کے جن 20 پولنگ اسٹینشز پر پولنگ ہوئی، ان میں سے 13 پولنگ اسٹیشنز کے نتائج کے بعد تحریک انصاف کے عامر سلطان چیمہ کو واضح برتری حاصل ہے۔ 20 میں سے 13 پولنگ اسٹشنز کے غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق تحریک انصاف کے عامر سلطان چیمہ 9600 ووٹ لیکر آگے ہیں جبکہ ن لیگ کے امیدوار ڈاکٹر ذوالفقار بھٹی 2552 ووٹ لے کر پیچھے ہیں۔

(جاری ہے)

اس سے قبل سرگودھا کے حلقہ این اے 91 میں الیکشن کمیشن نے دوبارہ گنتی کے دوران پولنگ بیگز کی سیلیں ٹوٹی ہونے اور بیگز غائب ہونے کے معاملے کی تحقیقاتی رپورٹ کا جائزہ مکمل کرنے کے بعد ری پولنگ کا حکم دیا تھا۔ رپورٹ کے مطابق ریٹرننگ آفیسر کے انکشاف پر ڈائریکٹر الیکشن کمیشن پنجاب کی سربراہی میں تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی گئی تھی۔ ٹیم نے سرگودھا پہنچ کر مفصل تحقیقات کے ساتھ درجنوں ملازمین سے پوچھ گچھ بھی کی تھی۔

بتایا گیا کہ سرگودھا کے حلقہ این اے 91 کے کل 20 پولنگ اسٹیشنز میں دھاندلی کا ہونا ثابت ہوگیا۔ حلقہ این اے 91 کے کل 20 پولنگ اسٹیشنز کے ووٹ ٹیمپر کیے گئے۔ اس لیے الیکشن کمیشن نے ان 20 پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ الیکشن کروانے کا فیصلہ کیا۔ واضح رہے کہ عام انتخابات 2018 کے موقع پر این اے 91 سرگودھا کے حلقے کے عامر سلطان چیمہ منتخب ہوئے تھے۔ بعد ازاں جیت کے ووٹ کا مارجن انتہائی کم ہونے ن لیگی امیدوار ذوالفقار بھٹی نے دوبارہ گنتی کی درخواست دی تھی جس میں وہ صرف 87ووٹوں کی برتری لے کر کامیاب قرار پائے تھے۔

پی ٹی آئی کے عامر سلطان چیمہ کی جانب سے تیسری بار دوبارہ گنتی کی درخواست سپریم کورٹ میں دی گئی جس پر سپریم کورٹ نے دوربارہ گنتی کے احکامات جاری کیے تھے۔ پانچ نومبر 2018 کو دوبارہ گنتی شروع ہوئی۔ 29 نومبر کو سرگودھا کے حلقہ این اے 91 میں ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا عمل مکمل ہو گیا، پی ٹی آئی کے عامر سلطان چیمہ کے ایک لاکھ 7 ہزار 937 اور (ن) لیگ کے ڈاکٹر ذوالفقار علی بھٹی کے 1 لاکھ 6 ہزار 651 ووٹ نکلے، اس طرح عامر سلطان چیمہ کو 1286 ووٹوں کی برتری حاصل ہوگئی تھی۔

تاہم ریٹرننگ آفیسر نے اسے نامکمل نتیجہ قرار دے کر رپورٹ الیکشن کمیشن کو ارسال کر دی تھی۔ ریٹرننگ آفیسر نے واضح کیا تھا کہ 20 پولنگ سٹیشنوں کے تھیلوں کی سیلیں تبدیل شدہ ہیں جبکہ پانچ پولنگ سٹیشنوں کے تھیلے ہی غائب ہیں۔ اب اس معاملے کو منطقی انجام تک پہنچاتے ہوئے دوبارہ الیکشن کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔