پنجاب یونیورسٹی اسلامک سنٹر ہاسٹل سے طالبعلم کے مبینہ اغواء کیخلاف ساتھی طلباء کا کیمپس پل پر ٹریفک بلاک کر کے احتجاج

یونیورسٹی انتظامیہ نے ہنگامی طورپر تمام ہاسٹلز بند کر دیئے ، پولیس نے 15طالبعلموں کے خلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی

پیر اپریل 20:26

لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 15 اپریل2019ء) پنجاب یونیورسٹی اسلامک سنٹر ہاسٹل سے طالعلم کے مبینہ اغواء کیخلاف ساتھی طلباء نے کیمپس پل پر ٹریفک بلاک کر کے شدید احتجاج کیا ، یونیورسٹی انتظامیہ نے ہنگامی طورپر تمام ہاسٹلز بند کر دیئے ، پولیس نے 15طالبعلموں کے خلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ۔

(جاری ہے)

تفصیلات کے مطابق کیمپس پل پر احتجاج کرنے والے طلباء نے بتایا کہ ہیلی کالج آف بینکنگ اینڈ فنانس میں بی بی اے طالبعلم ابو بکر کو طلبا تنظیم کے کارکنوں نے رات گئے ہاسٹل سے اغواء کیا۔

طلباء کی جانب سے شدید نعرے بازی کی گئی ۔ احتجاج کے باعث کیمپس پل پر ٹریفک کا نظام متاثر ہوا اور گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگنے سے شہریوں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا ۔ دوسری جانب یونیورسٹی انتظامیہ نے ہنگامی طور پر تمام ہاسٹلز بند کر دئیے۔مسلم ٹائون پویس نے علی گجر، مظہر وٹو، وجاہت رفیق، اسامہ شفاعت، ذیشان رانجھا اور شعیب سمیت 15لڑکوں کے خلاف طالبم ابوبکر کو زدوکوب کے بعد اغوا کا مقدمہ درج کر کے تفتیش شروع کر دی ہے ۔