پیرس میں واقع عیسائیوں کے تاریخی نوٹرے ڈیم چرچ میں آگ بھڑک اٹھی

خوفناک آگ نے فرانس کے سب سے تاریخی چرچ کو مکمل طور پر اپنی لپٹ میں لے لیا، آگ بھجانے کی کوششیں جاری، تاہم آگ عمارت کو مکمل طور پر تباہ کر چکی

muhammad ali محمد علی منگل اپریل 01:02

پیرس میں واقع عیسائیوں کے تاریخی نوٹرے ڈیم چرچ میں آگ بھڑک اٹھی
پیرس (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔15 اپریل 2019ء) پیرس میں واقع عیسائیوں کے تاریخی نوٹرے ڈیم چرچ میں آگ بھڑک اٹھی، خوفناک آگ نے فرانس کے سب سے تاریخی چرچ کو مکمل طور پر اپنی لپٹ میں لے لیا، آگ بھجانے کی کوششیں جاری۔ فرانسیسی خبر رساں اداروں کی جانب سے فراہم کردہ تفصیلات کے مطابق پیرس میں واقع عیسائیوں کے تاریخی نوٹرے ڈیم چرچ میں آگ بھڑک اٹھی ہے۔

نوٹرے ڈیم چرچ فرانس کا سب سے بڑا اور تاریخی چرچ تصور کیا جاتا ہے۔ جبکہ نوٹرے ڈیم چرچ دنیا بھر کے عیسائیوں کیلئے مقدس ترین چرچ کی حیثیت بھی رکھتا ہے۔ نوٹروے ڈیم چرچ 850 سال قبل تعمیر کیا گیا کیتھولک چرچ ہے۔ ہر سال دنیا بھر سے کروڑوں کی تعداد میں عیسائی نوٹرے ڈیم چرچ کا رخ کرتے ہیں۔ نوٹروے ڈیم کے پاس فرانس کی سب سے قدیم ترین عمارت ہونے کا اعزاز بھی ہے، جس کے باعث دنیا بھر سے لاکھوں سیاح اس عمارت کا دیدار کرنے کیلئے پیرس کا رخ کرتے ہیں۔

(جاری ہے)

اب اطلاعات ملی ہیں کہ نوٹرے ڈیم چرچ میں لگنے والی آگ نے پورے چرچ کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ سوشل میڈیا پر سامنے آنے والی کچھ ویڈیو میں چرچ کو خوفناک آگ کے باعث تباہ ہوتے دکھایا گیا ہے

ریسکیو ٹیموں کی جانب سے آگ بھجانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ جبکہ آگ لگنے کی وجہ تاحال معلوم نہیں ہو سکی۔ بتایا گیا ہے کہ لگنے والی آگ نے نوٹروے ڈیم چرچ کو مکمل طور پر تباہ کر دیا ہے۔

چرچ کی حالت پہلے سے ہی بہت مخدوش تھی، جبکہ حال ہی میں اس کی مرمت کے کام کا آغاز کیا گیا تھا۔ تاہم اب چرچ میں لگنے والی آگ کے باعث کہا جا رہا ہے کہ چرچ کی عمارت کے بچ جانے کے امکانات بہت کم ہیں، تاہم اس کے باوجود ریسکیو اور فائر بریگیڈ کی ٹیمیں آگ بھجانے اور اور عمارت کو بچانے کی کوششوں میں مصروف ہیں۔ اس دوران پریس کی عوام کی بڑی تعداد اور فرانسیسی صدر بھی جائے وقوعہ پر پہنچ چکے ہیں۔