ن لیگ کا اسد عمر کے وزارت خزانہ چھوڑنے کے فیصلے پر ردِ عمل آ گیا

اصل مسئلہ اسد عمر نہیں بلکہ وزیراعظم خو دہیں، اسد عمر کا جانا اس بات کا ثبوت ہیں کہ حکومت کی معاشیاں پالیسیاں ناکام ہیں۔ترجمان ن لیگ

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان جمعرات اپریل 14:50

ن لیگ کا اسد عمر کے وزارت خزانہ چھوڑنے کے فیصلے پر ردِ عمل آ گیا
اسلام آباد(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 18 اپریل2019ء) پاکستان مسلم لیگ ن کا اسد عمر کے وزارت خزانہ چھوڑنے کے فیصلے پر ردِ عمل آ گیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان مسلم لیگ ن کی ترجمان مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ اگر حکومت کی پالیسیاں بہت اچھی تھیں تو اب کیا ہوا؟۔کیوں اسد عمر کو وزارت خزانہ چھوڑنے کا کہا گیا۔ اصل مسئلہ اسد عمر نہیں بلکہ وزیراعظم خو دہیں، اسد عمر کا جانا اس بات کا ثبوت ہیں کہ حکومت کی معاشیاں پالیسیاں ناکام ہیں۔

خیال رہے وزیر خزانہ اسد عمر کی استعفے کی خبریں تو کچھ روز سے سرگرم تھیں تاہم اب وزیر خزانہ اسد عمر نے وزارت خزانہ نے عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ اسد عمر وزارت خزانہ کا قلمدان چھوڑنے کے اعلان کے بعد اہم پریس کانفرس کریں گے۔

(جاری ہے)

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اسد عمر آج سوا تین بجے پریس کانفرنس کریں گے۔ جب کہ ممکنہ طور پر وہ پریس کانفرنس میں وزارت خزانہ چھوڑنے کی وجوہات سے متعلق آگاہ کریںگے،واضح رہے اسد عمر نے ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ وزیر اعظم مجھے خزانہ کی بجائے وزارت توانائی دینا چاہتے تھے۔

وزیراعظم کابینہ میں تبدیلی چاہتے ہیں۔ میں نے وزیراعظم کو اعتماد میں لیا ہے کہ میں مزید کابیبنہ کا حصہ نہیں رہوں گا۔ اسد عمر نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان چاہتے ہیں کہ میں وزارت خزانہ چھوڑ دوں،میرا یقین ہے کہعمران خان پاکستان کے لیے امید ہیں۔ ہم انشاء اللہ نیا پاکستان بنائیں گے۔واضح رہے اس سے قبل بھی وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے اپنے استعفے سے متعلق گردش کرنے والی تمام خبروں کی تردید کی تھی۔وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کہا کہ یہ سب کی باتیں غلط ہیں میں کہیں نہیں جارہا۔ اس موقع پر انہوں نے یہ شعر بھی سنایا اور کہا کہ ہزاروں خواہشیں ایسی کہ ہر خواہش پہ دم نکلے۔