وزیر مواصلات خیبرپختونخوا کا دورہ ضلع شمالی وزیرستان

جمعرات اپریل 17:00

وزیر مواصلات خیبرپختونخوا کا دورہ ضلع شمالی وزیرستان
پشاور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 18 اپریل2019ء) خیبر پختونخواہ کے وزیر برائے مواصلات و تعمیرات اکبر ایوب خان نے کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کے ویژن کے مطابق ضم شدہ اضلاع میں ترقی کا عمل ہر گزرتے دن کے ساتھ مزید تیز ر دیا جائے گا تاکہ وہاں کے لوگوں کی محرومیوں اور پسماندگی کاجلد ازالہ کیا جا سکے اور علاقے کو ترقیاتی میدان میں ملک کے دوسرے حصوں کے برابر لایا جا سکے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز شمالی وزیرستان کے دورے کے موقع پر قبائلی عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اکبر ایوب خان نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کا صوبے کے ساتھ انضمام کا عمل بغیر کسی رکاوٹ کے تیزی سے جاری ہے۔اس موقع پر کمشنر بنوں عادل صدیقی، اسسٹنٹ کمشنر میرعلی محمد یوسف کریم، سپرنٹنڈنٹ انجینئر عبدالوہاب، سپرنٹنڈنٹ انجینئر ضم شدہ اضلاع عبدالستار خان اور دیگر احکام موجود تھے۔

(جاری ہے)

صوبائی وزیر نے دورہ کے موقع پر مختلف سکیموں کا افتتاح بھی کیا جن میں موسقی انظرآباد3 کلومیٹر لمبی سڑک، خادی نعوانہ پل جوکہ 250 میٹر لمبی ہے جس سے تقریباً 20 ہزار لوگوں کو فائدہ ملے گا اور ان علاقوں سے میرعلی تک کے فاصلے میں 8 کلومیٹر کی نمایاں کمی آئے گی اور خیسور سیحیدرخیل، باروخیل تحصیل میرعلی ضلع شمالی وزیرستان کے سڑک شامل تھے۔

علاوازیں صوبائی وزیر نے مقامی لوگوں کے مطالبے اور ضروریات کو مدنظر رکھتے ہوئے مزید دو سڑکوں کی تعمیر کا اعلان بھی کیا جس میں خدی گاؤں کیلئے 5کلومیٹر اور نعوانہ خدری سیمانہ کے لیے 8کلومیٹرسڑک شامل ہیں۔ اکبر ایوب خان نے محکمہ مواصلات کے ملازمین کو ہدایات جاری کر تے ہوئے کہا کہ تمام سکیموں کو جلد از جلد مکمل کرایا جائے اور کوالٹی کا خاص خیال رکھا جائے تاکہ ان سکیموں کی تکمیل سے یہاں کے لوگ مستفید ہو سکیں اور تبدیلی کے نمایاں اثرات مرتب ہو سکے۔