اسد عمر آئی ایم ایف کے پاس جانے کے مخالف تھے

عمران خان اپنے بڑے بڑے خوابوں کی تکمیل چاہتے ہیں، جبکہ اسد اپنی پالیسی لے کر چل رہے تھے: زبیر عمر کا دعویٰ

muhammad ali محمد علی جمعرات اپریل 23:36

اسد عمر آئی ایم ایف کے پاس جانے کے مخالف تھے
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔18 اپریل 2019ء) اسد عمر آئی ایم ایف کے پاس جانے کے مخالف تھے، زبیر عمر کا دعویٰ ہے کہ عمران خان اپنے بڑے بڑے خوابوں کی تکمیل چاہتے ہیں، جبکہ اسد اپنی پالیسی لے کر چل رہے تھے۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیر خزانہ اسد عمر کے استعفیٰ پر ان کے بھائی اور سابق گورنر سندھ زبیر عمر کی جانب سے ردعمل دیا گیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے زبیر عمر کا کہنا تھا کہ وہ اسد عمر کی پالیسیوں اور سیاست سے اختلاف کرتے ہیں، تاہم ملک کو اسد عمر جیسے سیاستدانوں کی ضرورت ہے۔

زبیر عمر نے دعویٰ کیا ہے کہ اسد عمر قرض کے حصول کیلئے آئی ایم ایف جانے کے مخالف تھے۔ تاہم وزیراعظم عمران خان اپنے بڑے بڑے خوابوں کی تکمیل چاہتے ہیں۔ زبیر کا دعویٰ ہے کہ آئی ایم ایف سے قرض کے حصول کے معاملے پر اسد عمر اور وزیراعظم عمران خان کے درمیان اختلاف تھا۔

(جاری ہے)

اسی باعث اسد عمر نے اپنی وزارت سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ واضح رہے کہ اسد عمر نے جمعرات کے روز وزارت خزانہ کے عہدے سے استعفیٰ دینے کا اعلان کیا۔ اسد عمر نے اعلان کیا کہ انہیں وزارت توانائی کے عہدے کی پیش کش کی گئی ہے، تاہم انہوں نے کوئی بھی وزارت لینے یا وفاقی کابینہ کا حصہ بننے سے معذرت کر لی ہے۔ جبکہ اسد عمر کے استعفیٰ کے بعد سابق وزیر خزانہ حفیظ شیخ کو مشیر خزانہ بنانے کا اعلان کیا گیا ہے۔