دو بڑوں کی جنگ میں اسد عمر کو ہٹایا گیا ،زارتوں کی تبدیلیاں عام سی چیزیں ہیں ،خورشیدشاہ

اسد عمر جیسے لوگوں کو قرضوں اور تمام چیزوں کا علم تھا ، علم ہونے کے باوجودکہا90 دن میں تبدیلی لائیں گے ،میڈیا سے گفتگو

جمعہ اپریل 17:19

دو بڑوں کی جنگ میں اسد عمر کو ہٹایا گیا ،زارتوں کی تبدیلیاں عام سی چیزیں ..
سکھر (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 19 اپریل2019ء) پیپلزپارٹی کے سینئر رہنما خورشید شاہ نے کہا ہے کہ عمران خان نے سہانے خواب دکھائے اور دھوکا دیا، ہمیں دعا کرنی چاہیے کہ ہمارے ملک کی خیر ہو ، دو بڑوں کی جنگ میں اسد عمر کو ہٹایا گیا۔سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ نے کہا کہ وزارتوں کی تبدیلیاں عام سی چیزیں ہیں ، عمران خان نے سہانے خواب دکھائے اور دھوکا دیا ، اسد عمر جیسے لوگوں کو قرضوں اور تمام چیزوں کا علم تھا ، علم ہونے کے باوجودکہا90 دن میں تبدیلی لائیں گے ، آنے کے بعد صرف کچھ نہیں ہے کارونا رویا گیا۔

خورشیدشاہ نے کہا کہ وزیراعظم بھارت سے کشیدگی پرساتھ بیٹھنے کوتیارنہیں تھے، عمران خان سنگین حالات میں ساتھ نہیں بیٹھے اب کیابیٹھیں گے، اسد عمر کی ناکامی پرناکامی کے باعث تبدیلی تونظرآرہی تھی، معیشت اتنی خراب ہوئی کہ آئی ایم ایف کی اپنی شرائط آگئیں۔

(جاری ہے)

پی پی رہنما نے کہا چاروں صوبوں کو ہم نے اختیارات دیے تھے ، ان کے ہاتھ میں کچھ نہیں فواہدچوہدری کواپنا نہیں پتہ تھا ، ہمیں دعا کرنی چاہیے کہ ہمارے ملک کی خیر ہو ، عمران نے چین میں جاکر جو تقریر کی توپھریہاں کون آئے گا ، عمران خان کی تقریر میں یہی تھا کہ پاکستان میں کرپشن ہے۔

انہوںنے کہا کہ اسد عمر کو ملکی اقتصادیات کاکوئی تجربہ نہیں تھا، ملکی معیشت کے حالات اورگردشی قرضوں سے اسدعمرواقف تھے، اس کے باوجود بھی اسد عمر نے عوام کو خواب دکھائے۔خورشید شاہ نے کہا ہم سیاستدان ہیں ناکامی تسلیم کرنی چاہیے، حکومتی ناکامی پر سیاست نہیں کریں گے، کہتے آرہے تھے پالیسیوں سے معاشی حالات خراب ہوں گے۔رہنما پیپلز پارٹی نے کہا دو بڑوں کی جنگ میں اسد عمر کو ہٹایا گیا، شہریار آفریدی کواعجاز شاہ کے کہنے پر ہٹا یا گیا، شہریار آفریدی پی ٹی آئی کا بنیادی کارکن ہے۔

انھوں نے کہا ہم نے 80 لاکھ خواتین کو امداد دی، آج حالات یہ ہیں خاکروب کی نوکری بھی نہیں ، ہم ساری قوم کے آگے کھڑے ہونیکو تیار ہیں ، میں نواز شریف کو بھی کہتا تھا پارلیمنٹ میں آ وہ نہیں آئے، عمران خان کو بھی ہم نے کہا کہ پارلیمنٹ میں آ لیکن عمران خان کے ذہن میں ابھی بھی کنٹینر ہے۔خورشیدشاہ نے کہا کہ ساری چیزیں پارلیمنٹ میں لائیں گے تو ملک ترقی کرنے لگے گا ، عبدالحفیظ شیخ پیپلزپارٹی کے وزیر خزانہ رہے، ثابت ہوا حکومت کوپیپلز پارٹی کی ضرورت پڑی ہے، مختلف پارٹیوں کوجمع کرکے پی ٹی آئی کا وجودعمل میں لایا گیا، اس حکومت میں حکمران محفوظ نہیں ہیں۔

پی پی رہنما نے کہا قیمتوں میں جیسے اضافہ کیا گیا تو ڈر ہے لوگ بجلی خریدنا نہ چھوڑ دیں، عمران خان سے مولانا فضل الرحمان کا استعفے کامطالبہ ٹھیک ہے، ان ہاؤس تبدیلی بھی ہوسکتی ہے، نواز شریف نے پارلیمنٹ کی بالادستی تسلیم نہیں کی اور عمران خان بھی پارلیمنٹ کی بالادستی کو تسلیم کرنے کو تیار نہیں۔ان کا کہنا تھا معیشت کامسئلہ پارلیمنٹ میں لائیوحل ہوجائے گا، چیلنج کرتاہوں مسئلہ پارلیمنٹ میں حل نہ ہواتوسیاست چھوڑدوں گا۔