فردوس عاشق اعوان کا آصف زرداری کو کرپٹ کہنے سے گریز

جب تک عدالتیں کسی کو مجرم قرار نہیں دیتیں، میں کسی کو کرپٹ ہونے کا سرٹیفیکیٹ نہیں دے سکتی: مشیر اطلاعات

muhammad ali محمد علی ہفتہ اپریل 00:38

فردوس عاشق اعوان کا آصف زرداری کو کرپٹ کہنے سے گریز
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 19 اپریل2019ء) فردوس عاشق اعوان کا آصف زرداری کو کرپٹ کہنے سے گریز، مشیر اطلاعات کا کہنا ہے کہ جب تک عدالتیں کسی کو مجرم قرار نہیں دیتیں، میں کسی کو کرپٹ ہونے کا سرٹیفیکیٹ نہیں دے سکتی۔ تفصیلات کے مطابق مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان اپنا عہدہ سنبھالنے کے فوری بعد خبروں میں آگئی ہیں۔ پیپلز پارٹی کے دور میں وزیر اطلاعات رہنے والی فردوس عاشق اعوان کو سابق صدر آصف زرداری سے متعلق ایک بیان پر تحریک انصاف کے کارکنوں کی شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

فردوس عاشق اعوان جمعہ کے روز ایک نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں شریک تھیں جب ان سے پروگرام کی خاتون اینکر نے ایک دلچسپ سوال پوچھا۔

پروگرام کی اینکر نے مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان سے سوال کیا کہ کیا سابق صدر اور پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف زرداری کرپٹ ہیں؟ اس سوال پر مشیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان نے جواب دیا کہ جب تک عدالتیں کسی کو مجرم قرار نہیں دیتیں، میں کسی کو کرپٹ ہونے کا سرٹیفیکیٹ نہیں دے سکتی۔

(جاری ہے)

کون کرپٹ ہے کون نہیں، اس بات کا فیصلہ کرنے کیلئے عدالتیں موجود ہیں۔ آصف زرداری کیخلاف جعلی اکاونٹس کیس سپریم کورٹ میں چل رہا ہے، جس کا جلد فیصلہ عوام کے سامنے آ جائے گا۔ اس دوران خاتون اینکر نے سوال کیا کہ وزیراعظم عمران خان تو سرعام آصف زرداری کو کرپٹ قرار دیتے ہیں، تو اس کے جواب میں بھی فردوس عاشق اعوان نے کوئی واضح موقف اختیار کرنے سے گریز کیا۔

فردوس عاشق اعوان کو اپنے اس موقف کے باعث سوشل میڈیا پر تحریک انصاف کے کارکنوں کی شدید تنقید کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ تحریک انصاف کے کچھ کارکن تو فردوس عاشق اعوان کو پیپلز پارٹی کا ہمدرد تک قرار دینے سے گریز نہیں کر رہے۔ جبکہ کچھ کارکنوں کا کہنا ہے کہ فردوس عاشق اعوان کو اس حوالے سے واضح موقف اختیار کرنا ہوگا، تحریک انصاف کی پالیسی کے مطابق چلنا ہوگا۔