وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے بعد دیگر وزراء کے لیے بھی خطرے کی گھنٹی بج گئی

میری ٹیم میں صرف وہی رہے گا جو مجھے کام کرکے دکھائے گا۔ وزیراعظم عمران خان نے تمام وزرا پر واضح کردیا

Muqadas Farooq مقدس فاروق اعوان ہفتہ اپریل 11:01

وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے بعد دیگر وزراء کے لیے بھی خطرے کی گھنٹی بج ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 20 اپریل 2019ء) : وفاقی کابینہ میں ردوبدل کے بعد دیگر وزراء کے لیے بھی خطرے کی گھنٹی بج گئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے تمام وزرا پر واضح کردیا ہے کہ میری ٹیم میں صرف وہی رہے گا جو مجھے کام کرکے دکھائے گا۔اسی متعلق گفتگو کرتے ہوئے پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اجمل خان وزیر کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے سب پر واضح کردیا ہے کہ جو کام کرے گا وہ رہے گا نہیں تو گھر جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی والے کہہ رہے ہیں کہ جو لوگ اب حکومت میں لائے گئے وہ ان کے دور حکومت میں تھے، میں ان کو یہ بتا دوں کہ اس وقت ان کا لیڈر آصف علی زرداری تھا اور ان کا لیڈر عمران خان ہے ،دونوں لیڈروں میں زمین آسمان کا فرق ہے۔اجمل خان وزیر نے مزید کہا کہ عمران خان نے کھلاڑیوں کو متنبہ کیا ہے کہ وہ اپنی کارکردگی کو بہتر بنا یں۔

(جاری ہے)

وزیراعلی کے پی کے اور وزیر اعلی پنجاب کے بارے میں غلط خبریں چلائی جا رہی ہیں انہوں نے مزید کہا کہ ملک کی تاریخ میں اتنے دورے کسی وزیراعظم نے وزیرستان کے نہیں کیے جتنے عمران خان کر چکے ہیں ۔کیونکہ انہیں وہاں کے لوگوں کی محرومیوں کا اندازہ ہے۔واضح رہے گذشتہ روز اورکزئی میں عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا تھا کہ ہ محمود خان سے کہتا ہوں اور عثمان بزدار بھی سن رہاہوگا،کپتان اپنی ساری ٹیم کو دیکھ رہا ہوتا ہے، کبھی کبھی کپتان کو ٹیم کو جتوانے کیلئے تبدیلیاں کرنا پڑتی ہیں،ابھی بیٹنگ آردڑ بدلا ہے آئندہ بھی تبدیلیاں لاؤں گا، اس کا مقصد ٹیم کو جتوانا ہوتا ہے، میرا مقصد کمزور لوگوں کو اوپر اٹھانا ہے، انہوں نے کہا کہ میں نے تھوڑی سی تبدیلی کی ہے ، آئندہ بھی کروں گا، جو بھی میرے فائدے میں نہیں ہوگا اس کو ہٹا کردوسرا لے کر آؤں گا، میں وزراء اعلیٰ کو کہتا ہوں کہ اللہ ہمیں دیکھ رہا ہے، سرکاری ہسپتالوں میں علاج نہیں ہوتا، بچے سکول نہیں جاتے ،ادویات کی قیمتیں بڑھ جاتی ہیں ،اس کے ہم جواب دہ ہیں، ہمیں اپنی ٹیم پر نظر رکھنی ہے ، اور جو کھلاڑی پرفارمنس نہیں دکھاتا، اس کا بیٹنگ آرڈر بدلیں یا پھر اس کی نیا کھلاڑی لے کرآئیں۔