پاکستان ائیرلائن برسوں بعد خسارے پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئی

قومی ائیرلائن کے اخراجات اور کمائی برسوں بعد برابر ہوگئی ہے، ماہانہ کمائی ساڑھے 8 ارب روپے کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گئی ہے: حکام کا دعویٰ

muhammad ali محمد علی ہفتہ اپریل 23:03

پاکستان ائیرلائن برسوں بعد خسارے پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئی
کراچی (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین۔ 20 اپریل2019ء) پاکستان ائیرلائن برسوں بعد خسارے پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئی، قومی ائیرلائن کے اخراجات اور کمائی برسوں بعد برابر ہوگئی ہے، ماہانہ کمائی ساڑھے 8 ارب روپے کی ریکارڈ سطح تک پہنچ گئی ہے۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کی قومی ائیرلائن پی آئی اے کے حوالے سے برسوں بعد خوشخبری سننے کو ملی ہے۔ پاکستان ائیرلائن انتظامیہ نے دعوی کیا ہے کہ قومی ائیرلائن میں طویل عرصے بعد مالی خسارے پر قابو پا لیا گیا ہے۔

پی آئی اے حکام کا بتانا ہے کہ 31مارچ کو ختم ہونے والی سہ ماہی میں انتظامی اخراجات کی نسبت ریونیو میں معمولی اضافہ ہوا ہے۔ اس حوالے سے پاکستان ائیرلائن کے چیف ایگزیکٹو کے مشیر ایئروائس مارشل نورعباس نے بتایا ہے کہ قومی ائیرلان کے آپریشنل اخراجات اور ریونیو برابر ہوگئے ہیں۔

(جاری ہے)

برسوں بعد ایسا ہوا ہے کہ قومی ائیرلان کے آپریشنل اخراجات اور ریونیو برابر ہوگئے ہیں۔

کوشش ہے کہ 3سے 4 ماہ میں پی آئی اے نفع کمانے کے قابل ہوجائے گی۔ قومی ادارے کا ریونیو پہلی سہ ماہی میں8سے 8.5ارب روپے ماہانہ پر پہنچ گیا جو کہ گزشتہ سال اسی عرصے میں7ارب روپے ماہانہ تھا۔ بتایا گیا ہے کہ پاکستان ائیرلائن کے کمائی میں اضافہ، اور اخراجات میں کمی باقاعدہ منصوبہ بندی سے ممکن ہوئی۔ فضائی بیڑے میں 4 طیاروں کا اضافہ، ملازمین کی تعداد میں کمی، ٹکٹ ریزرویشن کی لاگت میں کمی، کارگو بزنس میں اضافہ اور نفع بخش روٹ پر پروازوں کی تعداد میں اضافے سے مثبت نتائج حاصل کرنے میں مدد ملی ہے جبکہ ترکی سے جدید سافٹ ویئر حاصل کیے جانے کے بعد سے صرف ٹکٹ ریزرویشن کی مد میں ماہانہ ایک ارب روپے کی بچت ہورہی ہے۔

بتایا گیا ہے کہ ایسی کارکردگی کا سلسلہ جاری رہا تو پاکستان ائیرلائن چند ہی ماہ میں منافع بخش ادارہ بننے میں کامیاب ہو جائے گا۔ یوں اس ادارے کی بدولت ملکی معیشت کو کسی نہ کسی حد تک سہارا ضرور ملے گا۔ جبکہ عوام کا بھی اپنی قومی ائیرلائن پر اعتماد مکمل طور پر بحال ہو جائے گا۔