العزیزیہ ریفرنس: نوازشریف کی سزا کیخلاف اپیل کی سماعت آج ہوگی

سابق وزیر اعظم کی جانب سے آج حاضری سے استثیٰ کی درخواست دائر کی گئی ہے

Mian Nadeem میاں محمد ندیم منگل اپریل 09:59

العزیزیہ ریفرنس: نوازشریف کی سزا کیخلاف اپیل کی سماعت آج ہوگی
اسلام آباد(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔ 23 اپریل۔2019ء) اسلام آباد ہائیکورٹ میں العزیزیہ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نوازشریف کی سزا کیخلاف اپیل کی سماعت آج ہوگی. تفصیلات کے مطابق منگل کے روز جسٹس عامر فاروق کی سربراہی میں اسلام آباد ہائیکورٹ کا 2رکنی بینچ نواز شریف کی العزیزیہ سٹیل ملز ریفرنس میں سزا کیخلاف اپیل پر سماعت کرے گا.

نواز شریف کی جانب سے آج حاضری سے استثیٰ کی درخواست دائر کردی گئی، میڈیکل سرٹیفکیٹ کے ساتھ اسلام آباد ہائی کورٹ میں جمع کرائی گئی. درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ نواز شریف بیماری کے باعث پیش نہیں ہو سکتے جبکہ ڈاکٹروں نے نواز شریف کو مکمل آرام کی بھی ہدایت کی ہے.

(جاری ہے)

میڈیکل بورڈ کی جانب سے کہا گیا ہے کہ نواز شریف کو ذہنی تناﺅ سے باہر آنے کیلئے آرام کی ضرورت ہے، ان کا باقاعدگی سے طبعی معائنہ کیا جا رہا ہے اور دل کی بیماری اور شوگر لیول کو مانیٹر کیا جا رہا ہے.

میڈیکل بورڈ کی رائے ہے کہ نواز شریف کے گردوں کی بیماری بھی تیسرے درجے پر ہے ماہرین حتمی رائے بعد میں مرتب کریں گے. اسلام آباد کی احتساب عدالت نے سابق وزیراعظم نوازشریف کو العزیزیہ اسٹیل ملز ریفرنس میں 7 سال قید اور جرمانے کی سزا سنائی تھی جس کے خلاف انہوں نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں اپیل دائر کررکھی ہے. مسلم لیگ ن کے قائد نوازشریف ان دنوں 6 ہفتوں کی ضمانت پر ہیں، سپریم کورٹ آف پاکستان نے طبی بنیادوں پر ان کی ضمانت منظور کی تھی.

28مارچ کو سپریم کورٹ نے طبی بنیادوں پرنوازشریف کو6 ہفتے کیلئے ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیتے ہوئے ان کی سزا معطل کردی تھی تاہم ان کے بیرون ملک جانے پر پابندی لگائی گئی تھی. سپریم کورٹ نے نواز شریف کے بیرون ملک جانے پر پابندی لگائی تھی اور فیصلے میں کہا تھاکہ نواز شریف ملک سے باہرنہیں جاسکتے، 6ہفتے بعد ضمانت ازخود ختم ہو جائے گی، 6 ہفتے بعد علاج مکمل نہ ہوا تو نوازشریف گرفتاری دے کرجیل جائیں. فیصلے میں کہا گیا تھا کہ ازسرنو ضمانت کے لیے ہائیکورٹ سے رجوع بھی کرسکتے ہیں .