ٹرمپ نے کانگرس کی کمیٹی میں طلبی نوٹس رکوانے کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا

ڈیموکریٹس کی اکثریت کا حامل ایوان نمائندگان صدر کے خلاف سیاسی جنگ میں مصروف ہے. درخواست میں موقف

Mian Nadeem میاں محمد ندیم منگل اپریل 11:54

ٹرمپ نے کانگرس کی کمیٹی میں طلبی نوٹس رکوانے کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا
واشنگٹن(اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین-انٹرنیشنل پریس ایجنسی۔ 23 اپریل۔2019ء) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنے خلاف امریکی ہاﺅس اورسائٹ کمیٹی کے ڈیموکریٹک چیئرمین ایلیاہ کمنگز کی جانب سے ذاتی اور مالی امور کی معلومات فراہم کرنے کے لیے جاری ہونے والے طلبی نوٹس کو رکوانے کے لیے عدالت سے رجوع کرلیا ہے. امریکی صدر نے عدالت میں درخواست دائر کی ہے جس الزام عائد کیا کہ ڈیموکریٹس کی اکثریت کے حامل ایوان نمائندگان نے ٹرمپ کے خلاف سیاسی جنگ کا آغاز کردیا ہے جس میں وہ غیر ضروری طلبی کے نوٹس کو اپنے ہتھیار کے طور پر استعمال کر رہے ہیں.

(جاری ہے)

امریکی ہاﺅس اورسائٹ کمیٹی کی جانب سے جاری ہونے والے طلبی نوٹس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی کاروباری کمپنی کی اکاﺅنٹنگ فرم میزرس یو ایس اے کے گزشتہ 8 برس کے دستاویزات طلب کر لیے تھے. خیال رہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ اس کمپنی کو طویل عرصے تک اپنے مالیاتی امور چلانے کے لیے استعمال کرتے رہے ہیں، جس پر غیر ضروری فائدہ حاصل کرنے کے لیے فنانشل اسٹیٹمنٹس کو تبدیل کرنے کا الزام تھا.

ایلیاہ کمنگز کی جانب سے پروانہ طلبی ایسے وقت میں جاری کیا گیا جب ڈونلڈ ٹرمپ کی کمپنی کے سابق وکیل مائیکل کوہن نے کانگریس کے سامنے یہ بیان دیا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی کل جائیداد غلط ظاہر کیں تھیں. اپنی درخواست دائر کرتے ہوئے ٹرمپ کے وکیل کا کہنا تھا کہ ایلیاہ کمنگز کی جانب سے طلبی کا نوٹس ناقابلِ نفاذ ہے کیونکہ اس میں کوئی جائز قانون سازی کا مقصد بھی شامل نہیں ہے، جبکہ یہ کانگریس کے تحقیقاتی اختیارات کی آئینی حد سے بھی تجاوز کر رہا ہے. ایلیاہ کمنگز کی جانب سے پروانہ طلبی ایسے وقت میں جاری کیا گیا جب ڈونلڈ ٹرمپ کی کمپنی کے سابق وکیل مائیکل کوہن نے کانگریس کے سامنے یہ بیان دیا تھا کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی کل جائیداد غلط ظاہر کیں تھیں.

متعلقہ عنوان :