Live Updates

پاکستان کو دہشتگرد ملک قرار دلانے کے حوالے سے سازشیں ہو رہی ہیں، شیریں مزاری

اگر دہشتگردی کو ختم کرنا ہے تو سرحد کے دونوں اطراف سے دہشتگردوں کو ختم کرنا ہوگا،مودی کو سابق وزیراعظم نے اپنے گھر بلایا، ایسی باتیں کرنے والے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں،وفاقی وزیر ووزیراعظم کی جانب سے ایران میں دیا گیا انتہائی خطرناک ہے، حنا ربانی کھر ، خرم دستگیر خان

منگل اپریل 18:17

پاکستان کو دہشتگرد ملک قرار دلانے کے حوالے سے سازشیں ہو رہی ہیں، شیریں ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 23 اپریل2019ء) وفاقی وزیر انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا ہے کہ پاکستان کو دہشتگرد ملک قرار دلانے کے حوالے سے سازشیں ہو رہی ہیں، اگر دہشتگردی کو ختم کرنا ہے تو سرحد کے دونوں اطراف سے دہشتگردوں کو ختم کرنا ہوگا،مودی کو سابق وزیراعظم نے اپنے گھر بلایا، ایسی باتیں کرنے والے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں۔

منگل کو قومی اسمبلی میں مسلم لیگ (ن) کے رکن خرم دستگیر خان نے نکتہ اعتراض پر کہا کہ وزیراعظم نے ایران میں یہ اعتراف کیا کہ ایران میں دہشتگردی کے لئے پاکستان کی سرزمین استعمال ہوئی ہے۔ وزیراعظم کے گزشتہ کچھ عرصے کے سفارتی بیانات سے پاکستان بیک فٹ پر جارہا ہے‘ پاکستان کو دہشتگرد ملک قرار دلانے کے حوالے سے سازشیں ہو رہی ہیں۔

(جاری ہے)

وزیراعظم ایوان میں آکر اس کی وضاحت کریں اس کے جواب میں ڈاکٹر شیریں مزاری نے کہا کہ وزیراعظم جرمنی اور فرانس کی بات کرنا چا رہے تھے تاہم ان کی زبان سے جاپان نکل گیا۔

وزیراعظم نے ایران میں جو بات کی اس کو اسی تناظر میں لیا جائے۔ وزیراعظم نے یہ کہا کہ ایران میں دہشتگردی کے لئے پاکستان سے گروہ ملوث ہیں جبکہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ مکران کوسٹل ہائی وے پر 14 پاکستانیوں کے قتل میں ایران کی سرزمین استعمال کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل گزشتہ حکومتوں نے ایران کو پاکستان کی سرزمین پر رسائی دی۔ تاریخ کو بھلایا نہیں جاسکتا۔

اگر دہشتگردی کو ختم کرنا ہے تو سرحد کے دونوں اطراف سے دہشتگردوں کو ختم کرنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ یہاں مودی کی بات کی گئی تو گزشتہ حکومت اس کو سننے دہلی گئی جبکہ اس کے نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر کو مری میں بلایا گیا۔ مودی کو سابق وزیراعظم نے اپنے گھر بلایا۔ ایسی باتیں کرنے والے پہلے اپنے گریبان میں جھانکیں۔ قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے حنا ربانی کھر نے کہاکہ ہمارے وزیراعظم نے ایرانی صدر کے ساتھ کھڑے ہوکر کہا کہ ہماری سرزمین استعمال کی گئی۔

انہوںنے کہاکہ ہمارے وزیراعظم نے ہمارے ملک کو مذاق بنا دیا ہے ۔انہوںنے کہاکہ مودی ایک ایسا وزیراعظم ہے جس نے اپنے ملک میں قتل عام کی روایت ڈالی ۔ انہوںنے کہاکہ وزیراعظم کا کیا کام کہ وہ کہے کہ افغانستان میں فلاں قسم کا نِظام آنا چاہیے۔ مسلم لیگ (ن)کے خرم دستگیر خان نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعظم نے ایران میں جو بیان دیا وہ انتہائی خطرناک ہے۔ انہوںنے کہاکہ وزیراعظم کا بیان پاکستان کو بیک فٹ پر لے جانے کے مترادف ہے۔ انہوںنے کہاکہ وزیراعظم نے اس سے قبل بھی اسی قسم کا بیان نیویارک ٹائمز کو دیا ،میرا مطالبہ ہے وزیراعظم اپنے بیان پر ایوان کو آگاہ کریں۔ انہوںنے کہاکہ میں وزیراعظم کو مودی کا یار یا غدار نہیں کہتا۔
بھارتی انتخابات میں مودی کی برتری سے متعلق تازہ ترین معلومات