وزیراعظم نے اسمبلیاں توڑنے کا سوچ لیا

عمران خان شدید غصے میں اور ناراض بھی ہیں، اتحادیوں اور اپوزیشن کے ہاتھوں بلیک نہیں ہوں گے، یہ نظام مزید نہیں چل سکتا، پارلیمنٹ چلانا وزیراعظم کے بس میں نہیں ہے، انہوں نے فیصلہ کرنا ہے کہ حتمی اقدام بجٹ سے پہلے اٹھایا جائے یا بجٹ کے فوری بعد: ڈاکٹر شاہد مسعود

muhammad ali محمد علی منگل اپریل 20:59

وزیراعظم نے اسمبلیاں توڑنے کا سوچ لیا
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔23 اپریل 2019ء) ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ وزیراعظم نے اسمبلیاں توڑنے کا سوچ لیا، عمران خان شدید غصے میں اور ناراض بھی ہیں، اتحادیوں اور اپوزیشن کے ہاتھوں بلیک نہیں ہوں گے، یہ نظام مزید نہیں چل سکتا، پارلیمنٹ چلانا وزیراعظم کے بس میں نہیں ہے، انہوں نے فیصلہ کرنا ہے کہ حتمی اقدام بجٹ سے پہلے اٹھایا جائے یا بجٹ کے فوری بعد۔

تفصیلات کے مطابق معروف اور سینئر صحافی ڈاکٹر شاہد مسعود کی جانب سے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام سے گفتگو کرتے ہوئے تہلکہ خیز دعویٰ کیا گیا ہے۔ ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ موجودہ نظام اب مزید نہیں چل سکتا۔ وزیراعظم عمران خان کیلئے پارلیمنٹ چلانا ممکن نہیں ہے۔ وزیراعظم عمران خان کا جیسا مزاج ہے، ان کیلئے ایسے میں پارلیمنٹ چلانا ممکن نہیں ہے۔

(جاری ہے)

ڈاکٹر شاہد مسعود کا دعویٰ ہے کہ وزیراعظم عمران خان شدید غصے میں ہیں، جبکہ وہ ناراض بھی ہیں۔ ڈاکٹر شاہد مسعود کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے سوچ لیا ہے کہ کسی سے بلیک میل ہونے کی بجائے اسمبلیاں توڑنا بہتر آپشن ہے۔ وزیراعظم سنجیدگی سے اسمبلیاں توڑنے پر غور کر رہے ہیں۔ ڈاکٹر شاہد مسعود کا کہنا ہے کہ اب اس ملک میں موجودہ نظام حکومت مزید نہیں چلا سکتا۔ موجودہ نظام خود گر جائے گا۔ وزیراعظم کو اس حوالے سے فیصلہ کرنا ہی ہوگا۔ تاہم دیکھنا یہ ہے کہ وزیراعظم یہ فیصلہ بجٹ پیش کرنے سے قبل کرتے ہیں یا بجٹ پیش کرنے کے بعد۔