انگلینڈ میں کھلاڑیوں کو ”محتاط“ رہنے کی ہدایت

کسی اجنبی سے نہ ملیں،تحفہ نہ لیں،باہر جانے سے قبل ٹیم منیجر سے اجازت لیں: مینجمنٹ کا کھلاڑیوں کو پیغام

Zeeshan Mehtab ذیشان مہتاب بدھ اپریل 11:47

انگلینڈ میں کھلاڑیوں کو ”محتاط“ رہنے کی ہدایت
لاہور(اردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 24اپریل2019ء) پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی )نے انگلینڈ میں کھلاڑیوں کو محتاط رہنے کی ہدایت دی ہے۔ماضی کے دورہ انگلینڈ میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعات کی وجہ سے پی سی بی نے انگلینڈ میں کھلاڑیوں کو محتاط رہنے کا کہا ہے، ان پر واضح کیا گیاکہ کسی صورت اجنبی شخص سے ملاقات نہ کریں، تحفہ لینے کا تو کوئی سوال ہی پیدا نہیں ہوتا، اگر ہوٹل سے باہر جانا ہو تو پہلے ٹیم منیجر سے اجازت لیں اور سکیورٹی آفیسر کو آگاہ کریں،گروپس کی صورت میں جانے کو ترجیح دیں، میڈیا منیجر کی اجازت کے بغیر کسی صحافی سے بات نہ کریں۔

واضح رہے کہ برطانوی میڈیا ہمیشہ سے پاکستانی ٹیم کے بارے میں منفی خبروں کی تلاش میں رہتا ہے،ماضی میں بال ٹمپرنگ، سپاٹ فکسنگ سمیت مختلف تنازعات سامنے آ چکے ہیں، ورلڈکپ کے دوران بھارت سمیت دنیا بھر کے صحافی بھی انگلینڈ میں موجود ہوں گے ، اس لیے زیادہ محتاط رہنے کا کہا گیا ہے، گذشتہ برس لارڈز ٹیسٹ کے دوران ”سمارٹ واچز“ کا تنازع سامنے آیا تھا،سکیورٹی آفیسر میجر (ر) اظہر ٹیم کے ساتھ سائے کی طرح موجود رہیں گے، پی سی بی نے کھلاڑیوں کو سوشل میڈیا کے بھی کم استعمال کا کہا ہے، وہ صرف اچھی کارکردگی پر ایک دوسرے کو سراہنے جیسے پیغامات ہی جاری کر سکیں گے۔

(جاری ہے)

ذرائع کے مطابق انگلینڈ روانگی سے قبل چیئرمین پی سی بی احسان مانی نے بھی ٹیم مینجمنٹ کو سختی سے ہدایت کی کہ ڈسپلن کی خلاف ورزی کو کسی صورت برداشت نہ کیا جائے، یو اے ای میں آسٹریلیا سے سیریز کے دوران عمر اکمل رات 3 بجے ہوٹل واپس آئے تھے جس پر انھیں جرمانے کا سامنا کرنا پڑا تھا، اسی واقعے کے تناظر میں بورڈ چیف نے آئندہ سخت ایکشن کی ہدایت دی۔اس سے قبل جب قومی ٹیم نے اسلام آباد میں وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی تو انھوں نے بھی سب سے یہی کہا تھاکہ وہ ملک کے سفیر ہیں لہذا کوئی ایسی حرکت نہ کریں جس سے بدنامی کا سامنا کرنا پڑے۔