سابق آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی کے تبادلے کے خلاف درخواست

لاہور ہائیکورٹ نے درخواست گزار وکیل کو آئی جی پنجاب عارف نواز کو بھی فریق بنانے کا حکم دے دیا

بدھ اپریل 21:44

سابق آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی کے تبادلے کے خلاف درخواست
لاہور (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - آن لائن۔ 24 اپریل2019ء) لاہور ہائیکورٹ نے سابق آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی کے تبادلے کے خلاف درخواست پر درخواست گزار وکیل کو آئی جی پنجاب عارف نواز کو بھی فریق بنانے کا حکم دے دیا۔جسٹس شجاعت علی خان رحمان عزیز کی درخواست پر سماعت کی۔درخواست گزار کی جانب سے اسامہ خاور گھمن ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے۔

(جاری ہے)

درخواست گزار وکیل کا موقف ہے کہ پولیس آرڈر 2002 آئی جی کا پوسٹنگ کا دورانیہ تین سال کا ہے۔سابق آئی جی جاوید سلیمی کا چھ ماہ کے بعد تبادلہ کردیا گیا۔موجودہ حکومت نے 8 ماہ کے عرصے میں تین آئی جی پنجاب تبدیل کر چکی ہے۔ قانون اور سپریم کورٹ کے فیصلوں کے تحت ٹھوس وجوہات کے بغیر تین سے پہلے تبادلہ نہیں کیا جا سکتا۔ درخواست میں استدعا کی گئی ہے کہ عدالت سابق آئی جی پنجاب امجد جاوید سلیمی کے تبادلے کا اقدام کالعدم قرار دے۔