وزیراعظم کی دورہ چین کیلئے روانگی تاخیر کا شکار ہوگئی

عمران خان اور وزراء کے وفد کو جہاز میں فنی خرابی کے باعث جہاز سے اترنا پڑ گیا

muhammad ali محمد علی جمعرات اپریل 19:10

وزیراعظم کی دورہ چین کیلئے روانگی تاخیر کا شکار ہوگئی
اسلام آباد (اردوپوائنٹ اخبارتازہ ترین۔25 اپریل 2019ء) وزیراعظم کی دورہ چین کیلئے روانگی تاخیر کا شکار ہوگئی، عمران خان اور وزراء کے وفد کو جہاز میں فنی خرابی کے باعث جہاز سے اترنا پڑ گیا۔ تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کی دورہ چین کیلئے روانگی تاخیر کا شکار ہوگئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان کو اپنے وفد کے ہمراہ چین کیلئے روانہ ہونا تھا، تاہم وزیراعظم کا جہاز عین موقع پر فنی خرابی کا شکار ہوگیا۔

فنی خرابی کے باعث وزیراعظم عمران خان اور وزراء کے وفد کو جہاز سے نیچے اترنا پڑا۔ جہاز کی فنی خرابی دور ہوتے ہی وزیراعظم چین کیلئے روانہ ہو جائیں گے۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان نے دورہ چین سے قبل اپنے بیان میں کہا کہ سی پیک ہماری حکومت کی ترجیح ہے۔پاک چین شراکت داری کو نئی بلندیوں تک پہنچانے کیلئے دورہ کررہا ہوں۔

(جاری ہے)

چینی دورے کے دوران چینی ہم وزیراعظم اور چینی صدر سے ملاقاتیں ہوں گی۔

وزیراعظم نے کہا کہ چینی قیادت کے ساتھ ملاقاتوں میں باہمی دلچسپی کے امورپر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ چین کے تعاون اوردوٹوک حمایت پر شکر گزار ہیں۔عمران خان نے کہا کہ پراعتماد ہوں کہ دورہ چین سے دوطرفہ تعلقات کو مزید وسعت ملے گی۔انہوں نے کہا کہ چین اور پاکستان کے درمیان باہمی احترام کا رشتہ ہے۔ چین پاکستان کاقریبی دوست اور آئرن بردار ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان اور چین کی دوستی عوام کے دلوں میں ہے۔عمران خان نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری بیلٹ اینڈ روڈ فلیگ شپ کا منصوبہ ہے۔چین میں بیلٹ اینڈ روڈ فورم میں شرکت کریں گے۔ واضح رہے وزیراعظم 25 سے 29 اپریل تک چین کا دورہ کریں گے، مشیر خزانہ حفیظ شیخ ، وزیر ریلوے شیخ رشید ، وزیرآبی منصوبہ بندی وزیراعظم کے ہمراہ ہوں گے جبکہ علی زیدی، رزاق داﺅد، خسروبختیار، زلفی بخاری بھی وفد میں شامل ہیں. وزیراعظم آج خصوصی طیارے سے بیجنگ کے لئے روانہ ہوں گے، عمران خان بیلٹ اینڈروڈفورم کی افتتاحی تقریب میں نمائندگی کریں گے، چینی صدر شی جن پنگ افتتاحی تقریب سے خطاب کریں گے، فورم کے دوسرے سیشن سے وزیراعظم عمران خان خطاب کریں گے،۔

فورم میں 40 ممالک کے رہنما اور سو سے زائد ملکوں ‘ بین الاقوامی اداروں اور کارپوریٹ سیکٹر کے وفود شرکت کریں گے. وزیراعظم کی آفیشل ملاقاتوں کاسلسلہ26اپریل سے شروع ہوگا، عمران خان کی ورلڈبینک سی ای اوکر سٹالینا جارجیوا اور آئی ایم ایف ایم ڈی کرسٹینالوگارڈ سے بھی اہم ملاقات طے ہیں، آئی ایم ایف ایم ڈی سے ملاقات 26 اپریل کو شام 5 بجے شیڈول ہیں. وزیراعظم کے اعزاز میں پاک چین فرینڈ شپ ایسوسی ایشن ظہرانہ دےگی جبکہ چینی صدر شرکاءکے اعزاز میں اعشائیہ دیں گے،گالہ پر فارمنسزبھی ہوں گی ، بیلاروس کے صدر اور ایتھوپیئن ہم منصب سے سائیڈ لائین ملاقات بھی ہوگی. وزیراعظم عمران خان 27 اپریل کوعالمی کانفرنس سینٹرپہنچیں گے، جہاں چینی صدر ان کا استقبال کریں گے، عمران خان ” ترقی کے نئے ذرائع” کے موضوع پرخصوصی خطاب کریں گے، وزیراعظم یو این ترقیاتی ایجنڈا برائے 2030 کے سیشن میں بھی شریک ہوں گے۔

وزیراعظم 27 اپریل کوچین کی نائب صدر وانگ کیشان سے ملاقات کریں گے جبکہ چینی صدرشی جن پنگ سے ون آن ون ملاقات28اپریل کوہوگی، ملاقات میں مختلف معاہدوں پر دستخط بھی ہوں گے۔ وزیراعظم کی ہواوے کمپنی کے سی ای او سے ملاقات شیڈول میں شامل ہیں ، جبکہ پاک چین ٹریڈ انویسٹمنٹ فورم وزیراعظم کےاعزازمیں ظہرانہ دے گا، عمران خان کار بنانے والی نجی کمپنی کے ہیڈ کوارٹرز کا بھی دورہ کریں گے۔

وزیراعظم چین میں عالمی نمائش میں پاکستانی اسٹال کا دورہ کریں گے ، وہ چینی صدر،دیگرعالمی راہنماﺅں کے ہمراہ چینی اسٹال کادورہ کریں گے، عمران خان،عالمی راہنماﺅں کوخصوصی ڈاکیومنٹری دکھائی جائےگی۔ عمران خان چائنہ گارڈن میں شجر کاری مہم میں حصہ لیں گے اور چین کی ثقافتی نمائش 2019 میں بھی شریک ہوں گے‘بعد ازاں 28 اپریل کو رات 11 بجے وطن واپسی کے لئے روانہ ہوں گے۔

وزیراعظم عمران خان کے بیجنگ کے دورے کی ایک اہم خصوصیت پاکستان اور چین کے درمیان آزاد وتجارت کے معاہدے کے دوسرے مرحلے پر دستخط ہونا بھی ہے، چین کے ساتھ تجارت کے فروغ کے دوران پاکستانی صنعتوں کے مفادات کے تحفظ کیلئے معاہدے میں خصوصی اقدامات پر بھی غورکیاجارہا ہے، دونوں ملکوں کے درمیان مختلف شعبوں میں تعاون کومزید بڑھانے کیلئے دورے کے دوران کئی دیگر معاہدوں اور مفاہمت کی یادداشتوں پر بھی دستخط کیے جائیں گے۔