عالمی ادرہ صحت کی سفارشات کے برعکس پاکستان نے صحت کے شعبے میں پچیس فیصد بھی رقم خرچ نہیں کی، تفصیلات ایوان میں پیش

جمعہ اپریل 15:49

عالمی ادرہ صحت کی سفارشات کے برعکس پاکستان نے صحت کے شعبے میں پچیس فیصد ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 26 اپریل2019ء) وفاقی حکومت نے گزشتہ دس سالوں کے دوران صحت پر کئے گئے اخراجات کی تفصیلات ایوان میں پیش کر دیں جس میں اعتراف کیا گیاکہ عالمی ادرہ صحت کی سفارشات کے برعکس پاکستان نے صحت کے شعبے میں پچیس فیصد بھی رقم خرچ نہیں کی۔

(جاری ہے)

جمعہ کو وفاقی حکومت نے گذشتہ دس سالوں کے دوران صحت پر کیئے گئے اخراجات کی تفصیلات ایوان میں پیش کردیں جس میں اعتراف کیا گیاکہ عالمی ادرہ صحت کی سفارشات کے برعکس پاکستان نے صحت کے شعبے میں پچیس فیصد بھی رقم خرچ نہیں کی۔

وزارت صحت نے کہاکہ عالمی ادارہ صحت کی سفارش کے موجب کل جی ڈی پی کا چار فیصد صحت پر خرچ کرنا ہے۔ وزارت صحت نے کہاکہ پاکستان میں دس سالوں کے دوران سب سے زیادہ صفر اعشاریہ اکانوے فیصد خرچ ہوئے ،آئندہ مالی سال میں صحت کیلئے لئے چونسٹھ فیصد زیادہ رقم مختص کر رہے ہیں۔وزارت قومی صحت کے مطابق مالی سال2011-12 میں کل جی ڈی پی کا صرف صفر اعشاریہ 27 فیصد خرچ کیا گیا۔

متعلقہ عنوان :