طلبہ علم کے حصول کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھیں ،کامران بنگش

اپنے اقدامات کی بدولت بہت جلد خیبر پختونخوا کو ملک کا ڈیجیٹل ہب بنائیں گے

ہفتہ مئی 18:24

پشاور(اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 04 مئی2019ء) وزیراعلی خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و ٹیکنالوجی اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے سائنس وٹیکنالوجی کی ترقی اور اس سے صحیح معنوں میں استفادہ کرنے کیلئے اکیڈیمیا اور صنعتی شعبے کے مابین مضبوط روابط استوار کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ تعلیمی اداروں میں ایسے پروگراموں کو ترجیح دی جائے جسکی آج اشد ضرورت ہے اور اس سے روزگار کے زیادہ مواقع میسر آ سکتے ہوں۔

انہوں نے کہا کہ طلباء علم کے حصول کیلئے اپنی جدوجہد جاری رکھیں کیونکہ کامیابی محنت کے بعد حاصل ہوتی ہے اور اس کیلئے کوئی شارٹ کٹ راستہ ڈھونڈنا نہیں چاہیے۔معاون خصوصی نے کہا کہ سائنس و ٹیکنالوجی کے حوالے سے فاسٹ نیشنل یونیورسٹی کے منفرد منصوبے انتہائی اہمیت کے حامل ہیں اور طلبہ کو چاہیے کہ وہ اس طرح کی سہولیات سے بھرپور استفادہ کریں۔

(جاری ہے)

ان خیالات کا اظہار انہوں نے ہفتہ کے روز فاسٹ نیشنل یونیورسٹی پشاور کیمپس میں سالانہ اوپن ہاؤس کی اختتامی تقریب سے بطور مہمان خصوصی خطاب کے دوران کیا۔ منعقدہ تقریب کا مقصد طلبہ کو اپنی تخلیقی صلاحیتوں کے ساتھ ساتھ مارکیٹ میں نئی رجحانات کو سمجھنے اور شعبہ صنعت و اکیڈیمیا کے درمیان روابط کو مضبوط بنانے کی اہمیت کو اجاگر کرنا تھا۔

تقریب کے دوران فاسٹ نیشنل یونیورسٹی کے کمپیوٹر سائنس اور الیکٹریکل انجینئرنگ کے تقریبا سو طلبہ نے انجینئرنگ اور آئی ٹی کے مختلف شعبوں اور ایپلیکیشنز سے متعلق منفرد اور جدید منصوبوں کو پیش کیا جبکہ اوپن ہاؤس میں تقریبا 25 کمپنیوں کے علاوہ صنعتی اور مینوفیکچر کمپنیوں کے پیشہ ورانہ افراد نے حصہ لیا۔منعقدہ تقریب سے فاسٹ نیشنل یونیورسٹی کے کیمپس ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد طارق اور پروگرام آرگنائزر ڈاکٹر طارق یوسفزئی نے بھی خطاب کیا۔

اس موقع پر وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی کا کہنا تھاکہ قوموں کی ترقی میں سائنس و ٹیکنالوجی کا کلیدی کردار ہے اور ترقی یافتہ ممالک نے سائنس و ٹیکنالوجی کو اپنی ترقی کا زینہ قرار دے کر کامیابیاں سمیٹی ہیں۔انہوں نے فاسٹ نیشنل یونیورسٹی کو کامیاب اوپن ہاؤس کے انعقاد پر مبارکباد دی اور طلبہ کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ وہ مزید لگن اور محنت سے اپنی پڑھائی جاری رکھیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم اپنے اقدامات کی بدولت بہت جلد خیبر پختونخوا کو ملک کا ڈیجیٹل ہب بنائیں گے۔معاون خصوصی نے یقین دلایا کہ حکومت سائنسی منصوبوں میں ہر طرح کی تعاون اور فنڈ نگ کا بندوست کرے گی۔ اوپن ہاؤس میں معاون خصوصی نے طلبہ کی جانب سے بنائے گئے مختلف پراجیکٹس کا معائنہ کیا اور ان کی تخلیقی صلاحیتوں کو سراہا۔واضح رہے کہ اوپن ہاؤس میں طلبہ کو اپنی سائنسی منصوبوں کو پیش کرنے کے ساتھ ساتھ صنعتی اور اکیڈیمک ماہرین سے ملنے کا ایک موقع بھی ملا جبکہ مختلف کمپنیوں نے طلبہ سے انٹرویو لے کر انہیں ملازمت کی پیشکش بھی کردی۔