زرداری ہاؤس میں بلاول بھٹو کی جانب سے افطار ڈنر، کئی اہم شخصیات نے شرکت نہیں کی

اے این پی کے سربراہ بھی افطار ڈنر میں شریک نہیں ہوئے

Sumaira Faqir Hussain سمیرا فقیرحسین پیر مئی 13:35

زرداری ہاؤس میں بلاول بھٹو کی جانب سے افطار ڈنر، کئی اہم شخصیات نے شرکت ..
اسلام آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 18 مئی 2019ء) : پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے اپوزیشن رہنماؤں کے اعزاز میں آج اسلام آباد میں افطار پارٹی دی۔ جس میں تمام سیاسی جماعتوں کے سربراہان اور رہنماؤں کو شرکت کی دعوت دی گئی۔ افطار پارٹی کے بعد سیاسی رہنماؤں میں ملک کی سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال بھی کیا گیا۔ تاہم کچھ شخصیات ایسی بھی ہیں جنہوں نے دعوت نامے کے باوجود خود شرکت تو نہیں کی البتہ اپنے وفود کو بھیج دیا۔

عوامی نیشنل پارٹی کے سربراہ اسفندیارولی بیماری کی وجہ سے بلاول بھٹو کے مہمان نہیں بن سکے لیکن انہوں اپنا وفد بھیج دیا۔ محمود خان اچکزئی فلائٹ کی عدم دستیابی کے باعث گرینڈ افطار میں شرکت نہیں کرسکے۔ جبکہ امیر جماعت اسلامی سراج الحق بھی مصروفیات کے باعث بلاول بھٹو زرداری کے مہمان نہیں بن سکے۔

(جاری ہے)

لیکن انہوں نے بھی اپنا وفد بھیج دیا تھا۔

بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کے سربراہ اختر مینگل نے بھی آنے سے معذرت کرلی۔یاد رہے کہ نائب صدر مسلم لیگ ن مریم نواز نے بھی افطار پارٹی میں شرکت کی تھی۔ مسلم لیگ ن کے 6 رکنی وفد نے سینئر نائب صدرشاہد خاقان عباسی کی سربراہی میں افطار پارٹی میں شرکت کی۔ وفد میں مریم نواز، پرویز رشید ، حمزہ شہباز،سردار ایاز صادق ، مریم اورنگزیب بھی شریک تھے۔

مریم نواز کا استقبال چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو اور ان کی ہمشیرہ آصفہ بھٹو نے کیا۔ پیپلز پارٹی رہنماؤں میں بلاول بھٹو، آصف زرداری، رضاربانی، شیری رحمان، نیئربخاری، فرحت اللہ بابرشریک ہوئے۔ اجلاس میں آفتاب شیرپاؤ، لیاقت بلوچ ، حاصل بزنجو، ایمل ولی خان، زاہد خان، جہانزیب جمالدینی، میاں افتخار حسین و دیگر بھی شریک تھے۔اجلاس میں حکومت مخالف تحریک چلانے سے متعلق لائحہ عمل مرتب کیا جائے گا۔ اجلاس میں مستقبل میں اپوزیشن کی مشترکہ حکمت عملی پرغور کیا گیا۔ اپوزیشن جماعتوں نے گیس اورپیٹرول کی قیمتوں میں اضافے کومسترد کیا ۔ اپوزیشن جماعتوں نے نیب کی کارروائیوں پربھی تشویش کا اظہار کیا ۔