جعلی اکاؤنٹس کیس سے متعلق ایک اور نیب انکوائری میں آصف علی زرداری کی 13 جون تک عبوری ضمانت منظور

منگل مئی 22:49

جعلی اکاؤنٹس کیس سے متعلق ایک اور نیب انکوائری میں آصف علی زرداری ..
اسلام آباد ۔ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - اے پی پی۔ 21 مئی2019ء) اسلام آباد ہائی کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس سے متعلق ایک اور نیب انکوائری میں آصف علی زرداری کی دو لاکھ روپے کے مچلکوں کے عوض 13 جون تک عبوری ضمانت منظور کر لی ہے۔ آصف زرداری سات مختلف کیسز میں پہلے ہی عبوری ضمانت پر ہیں۔ جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل دو رکنی بنچ نے سابق صدر آصف علی زرداری کی جعلی اکاؤنٹس کیس سے متعلق نیب کی آٹھویں انکوائری میں ضمانت کی درخواست پر سماعت کی۔

(جاری ہے)

درخواست گزار کی جانب سے فاروق ایچ نائیک ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے اور موقف اختیار کیا کہ نیب نے ایک اور انکوائری میں 23 مئی کو طلب کیا ہے اور گرفتاری کا خدشہ ہے،لہذا ان کی ضمانت منظور کر کے نیب کو گرفتاری سے روکا جائے۔ عدالت نے 5 لاکھ روپے کے مچلکوں پر عبوری ضمانت منظور کرنے کا حکم سنایا تو فاروق ایچ نائیک نے مچلکوں کی رقم پانچ کے بجائے دو لاکھ روپے کرنے کی استدعا کی جس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے استفسار کیا کہ کیوں، کیا آپ کے پاس کیش کم ہو گیا ہے، جس پر فاروق ایچ نائیک نے کہا کہ جی بیلنس ختم ہو گیا ہے۔ عدالت نے استدعا منظور کرتے ہوئے حکم نامے میں تبدیلی کر دی۔