صدر سردار مسعود خان او آئی سی اجلاس میں شرکت کے لیے جدہ پہنچ گئے

اب وقت آ گیا ہے بھارت کو انسانیت کے خلاف جرائم کی پاداش میں احتساب کے کٹہرے میں کھڑا کیاجائے ،اسلامی تعاون تنظیم کے ممبران انسانی حقوق کی پامالیوں پر بھارت کا سماجی ، سفارتی مقاطع کریں‘ سعودی عرب روانگی سے قبل گفتگو

بدھ مئی 15:10

صدر سردار مسعود خان او آئی سی اجلاس میں شرکت کے لیے جدہ پہنچ گئے
جدہ (اُردو پوائنٹ اخبارتازہ ترین - این این آئی۔ 29 مئی2019ء) آزاد جموں و کشمیر کے صدر سردار مسعود خان اسلامی تعاون تنظیم کے سربراہ کانفرنس اور تنظیم کے کشمیر رابطہ گروپ کے اجلاس میں شرکت کے لیے سعود ی عرب کے ساحلی شہر جدہ پہنچ گئے ۔ جدہ آمد پر صدر آزاد کشمیر سردار مسعود خان کا کشمیر کمیونٹی اور سعودی عرب میں پاکستان کے سفارتی عملے نے استقبال کیا ۔

صدر آزاد کشمیر آج بدھ کے روز اسلامی تعاون تنظیم کے افتتاحی اجلاس میں جموں و کشمیر کے عوام کے حقیقی نمائندے کی حیثیت سے شرکت کریں گے اور مقبوضہ جموں و کشمیر کی موجودہ صورتحال خاص طور پر مقبوضہ وادی میں جاری بھارتی مظالم اور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے بارے میں اسلامی تعاون تنظیم کے اجلاس کے شرکاء کو آگاہ کریں گے ۔

(جاری ہے)

اجلاس میں پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی سمیت او ا ٓئی سی کے ممبر ممالک کے بیشتر وز رائے خارجہ شریک ہوں گے ۔

صدر سردار مسعود خان اسلامی وزرائے خارجہ اور کشمیر رابطہ گروپ کے اجلاسوں میں شرکت کے علاوہ اسلامی سر براہ کانفرنس میں بھی او آئی سی کے سیکرٹری جنرل کی دعوت پر شرکت کریں گے ۔ قبل ازیں سعودی عرب روانگی سے قبل اسلام آباد میں بات چیت کرتے ہوئے صدر سردار مسعود خان نے اسلامی تعاون تنظیم اور اس کے سیکرٹری جنرل کا جموں و کشمیر کے تنازعہ پر جرات مندانہ اور حقیقت پسندانہ موقف اختیار کرنے اور مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارتی مظالم اور انسانی حقوق کی بد ترین خلاف ورزیوں پر بھارتی حکومت کی کھل کر مذمت کرنے پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کہ انسانی حقوق اور اعلیٰ انسانی اقدار کی دھجیاں بکھیرنے پر عالمی برادری بھارت کو انصاف اور احتساب کے کٹہرے میں کھڑا کرے ۔

اُنہوں نے کہا کہ ہم اسلامی تعاون تنیظم کے ممبران کو یہ باور کر ا رہے ہیں کہ بھارت کوئی جمہوری ملک نہیں بلکہ ایک انتہا پسند دہشت گرد ریاست ہے جو کشمیری عوام کو اُن کا عالمی طور پر تسلیم شدہ حق خود ارادیت دینے کے بجائے اُنہیں گولیوں کا نشانہ بنا رہا ہے ۔ صدر سردار مسعود خان نے کہا کہ ہم اسلامی تعاون تنظیم پر زور دیں گے کہ وہ بھارت کا اقتصادی اور سفارتی مقاطع کریں تاکہ اُس پر دبائو بڑھا کر مقبوضہ علاقے میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کا سلسلہ رکوایا جائے ۔

صدر سردار مسعود خان نے مذید کہا کہ بھارت کو جلد یا بدیر کشمیر کو آزاد کرنا ہو گا کیونکہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کسی طور پر بھارت کے ساتھ یا بھارتی غلامی کو زیادہ دیر تک برداشت کرنے کے لیے تیار نہیں ہیں۔ انہوں نے او آئی سی کے سیکرٹری جنر ل کا خاص طور پر شکریہ ادا کیا جن کی ذاتی دلچسپی اور کوششوں کے باعث کشمیر اور فلسطین کے مسائل کو موثر اندا میں اُجاگر کرنے میں بڑی مدد ملی ۔